Category Archives: Urdu

ٹیئنز گروپ نے نوجوان نسل کو ہدف بناتے ہوئےعالمی برانڈنگ کی نئی حکمت عملی کا آغاز کردیا

تیانجن، چین، 2 فروری ، 2018 / سنہوا-ایشیا نیٹ / – 28 جنوری 2018ء کو ٹیئنز گروپ کے چیئرمین لی جن یوان نے ٹیئنز گروپ ہیڈکوارٹر تیانجن میں پریس کانفرنس کی اور دنیا بھرمیں اپنی برانڈنگ حکمت عملی اور گروپ کو مزید بہتر بنانے کا اعلان کیا۔ ٹیئنز گروپ کی جانب سے یہ اس سال کی پہلی کانفرنس تھی جس میں 6,000سے زیادہ افراد نے شرکت کی ۔ 30 کے پیٹے میں موجود نوجوان نسل پر توجہ مرکوز کرتےہوئے ٹیئنز گروپ کی بین الاقوامی توسیع اور نئی برانڈنگ کی حکمت ٹیئنز کی نئی حکمت عملی کو نئی شروعات، نئے طریقوں ،نئے کاروباری نمونوں اور نئے مستقبل کے موضوعات کی تکمیل کرے گی، جبکہ ہموار بین الاقوامی توسیع کو برقرار رکھے گی۔ ٹ

یئنز گروپ کا قیام 1995 میں عمل میں آیا۔ اپنے قیام کے 23 برس میں ادارہ ایک ننھی نجی انٹرپرائز سے آج ایک بین الاقوامی گروپ کا روپ دھار چکا ہے۔ اس وقت ٹیئنز گروپ کی دنیا کے ایک سو دس ممالک اور خطوں میں شاخیں ہیںجو بایوٹیکنالوجی، ہیلتھ مینجمنٹ، ہوٹل اور سیاحت، تعلیم و تربیت، ای-کامرس، بین الاقوامی تجارت اور مالیات جیسے شعبوں میں دنیا بھر کے 190 سے زیادہ ممالک کی مارکیٹوں کا احاطہ کرتے ہیں۔

ٹیئنز گروپ کی عالمی برانڈنگ حکمت عملی کانفرنس کا آغاز سینئر ڈائریکٹر آف گروپ برانڈز اور انٹرنیشنل پبلک ریلیشنزکیرل ہوینگ نے کیا۔ ہوینگ نے وضاحت کی کہ ٹیئنز گروپ کی مارکیٹ تحقیق نے اسے 30 سال کی نوجوانوں عورتوں کی جانب برانڈنگ توجہ مبذول کروانے کی طرف رہنمائی کی ہے اور ٹیئنز گروپ اپنی نئی برانڈنگ حکمت عملی کی ترویج کے لیے اپنی کوششوں کو آگے بڑھائے گا۔ کانفرنس میں ٹیئنز گروپ نے اپنے نئے برانڈ لوگو / وی آئی/ سی آئی،نئی اور پہلے سے بہتر پراڈکٹ پیکیجنگ اور نئی آفیشل ویب سائٹ کی بھی رونمائی کی۔ کمپنی کی نئی ڈیجیٹل مارکیٹنگ حکمت عملی ہر شعبے پر لاگو کی گئی ہے، جو ٹیئنز گروپ کے ترقی و تعاون کے مواقع میں دلچسپی رکھنے والے عالمی صارفین کو تعمیل کے واضح خیالات، تبادلہ خیال کے لیے ایک دوستانہ کمیونٹی اور مارکیٹنگ کے مواقع فراہم کررہی ہے۔

کانفرنس کے دوران ٹیئنز گروپ برانڈ کی بنیادی اقدار پر بھی زور دیا گیا، جن میں عالمی مارکیٹوں پر توجہ، عمل درآمد کو تحریک دینا اور مقامی برادری کی محبت، صحت اور ان کے لیے خدمات انجام دینے کے ٹیئنز گروپ کا برانڈ مشن شامل ہیں۔

ٹیئنز گروپ کی برانڈنگ حکمت عملی کی مجموعی طور پر بہتری اور اس کےکارپوریٹ سی آئی اوروی آئی سسٹمز کی بہتری ادارے کو دنیا میں ایک مثبت قوت بننے اور عالمی اتحاد قائم کرنے کے لیے نئی ساکھ دینا ممکن بنائے گی۔

ٹیئنز گروپ کی نئی سیلیز ٹیان ایم اینڈ وائی ہائیڈرا سیریز ،جس نے 2017ء میں بیسٹ ٹیسٹ ایوارڈ جیتا تھا ، سالانہ انرجی اسکن کئیر پروڈکٹ ایوارڈ، (چین اور عالمی چینی برادریوں کو خدمات دینے والی ایک معروف آن لائن میڈیا کمپنی سینا کارپوریشن کی جانب سے) کی تقریب میں پہلی بار عوامی سطح پر رونمائی کی گئی، جو حاضرین کی خوشی کا باعث بنی۔

کانفرنس سے پہلے ذرائع ابلاغ کو دیے گئے انٹرویو میں چیئرمین لی جن یوان نے 2018ء میں ٹیئنز گروپ کی عالمی توسیع کے لیے مواقع پر بات کی اور کہا کہ “اس سال عالمی اقتصادی انضمام اور معلوماترجحان بن جائیں گے۔ ٹیئنز گروپ اپنے نیٹ ورکس کے انضمام اور کاروباری تحریک حاصل کرنے کے لیے بگ ڈیٹا اور کلاؤڈ کمپیوٹنگ ٹیکنالوجیز کا استعمال کرتا ہے، جو 224 ممالک اور خطوں کا احاطہ کرنے والے 21 علاقوں پر مشتمل ہے اور دنیا کے پانچ براعظموں میں اثر و نفوذ پاتے ہوئے چین کے بیلٹ اینڈ روز منصوبے کو پورا کر رہی ہے۔ٹیئنز گروپ کی ‘باہر جانے’ کی ہی نہیں بلکہ ‘اندر لانے’ کی حکمت عملی بھی کاروبار کو یقینی بنانے، ملازمتوں کو تحفظ دینے، صحت و تحفظ کو فروغ دینے، اور ترقی کو یقینی بنانے کے لیے متنوع منصوبوں کی آمد کا سبب بن رہی ہے۔

چینی نژاد امریکی رچرڈ شا جو پہلے دنیا کے بڑے سیلز گروپ  کے پورٹ فولیو برانڈ مینجمنٹ اور اسٹریٹیجک پلاننگ کے نائب صدر رہ چکے ہیں ، نے حال ہی میں ٹیئنز گروپ کو بحیثیت جنرل مینیجر جوائن کیا ہے اور کانفرنس میں بھی شرکت کی۔ شا نے کہا کہ چئیرمین لی جن یوان کا کاروباری تنوع،نیٹ ورک انضمام اور کاروباری مطابقت پذیر ماحولیاتی نظامبین الاقوامی تعامل کے لیے ایک تجارتی میکانزم تشکیل دیتا ہے۔ یہ بلاشبہ ایک منفرد حکمت عملی ہے جو ایک نمایاں کاروباری نمونے اور برانڈ ترقی کا رحجان بننے کی صلاحیت رکھتی ہے۔

دبئی میں ٹیئنز گروپ کی پیشرفت کے حوالے سے، جس کا ذکر دبئی کے سی اے ٹی وی پر ہوا، چئیرمین لی نے کہا کہ ٹیئنز گروپ 2000ء کے اوائل سے دبئی میں خدمات انجام دے رہا ہے۔ مقامی روایات و ثقافتکا بھرپور احترام کرتے ہوئے ٹیئنز گروپ نے دبئی صارفین کے گروپ کا درست تعین کیا، بنیادی طور پر نوجوانوں کی مارکیٹ کو ہدف بنایا اور ٹیئنز گروپ کی مصنوعات کی قدر و اہمیت پر صارفین کو واقعتاً مطمئن کرنے کے لیے تجربے کی بنیاد پر مارکیٹنگ فراہم کی۔ یہ حکمت عملی دبئی میں ٹیئنز برانڈ کے اثر ورسوخ کو پھیلانے اوریہاں اپنی شناخت حاصل کرنے میں اہمثابت ہوگی۔ مستقبل میں ٹیئنز گروپ ٹیئنز او ای ایمز، او ڈی ایمز، یہاں تک کہ خطے سے ٹیئنز کی مصنوعات کی پڑوسی علاقوں بشمول یورپ، مشرق وسطیٰ اور شمالی افریقہ میں فراہمی کے لیے نقل و حمل، گوداموں اور تقسیم کے نظام کے لیے بھیدبئیکی انتہائی مستحکم او ای ایم اور او ڈی ایم صنعتوں کا فائدہ اٹھائے گا۔

مستقبل سے حوالے سے چیئرمین لی نے زور دیا کہ ٹیئنز گروپ اپنی بین الاقوامی برانڈ ساکھ کو ثقافتی طور پر منفرد خصوصیت کے ساتھ اختیار کرے گا اور نیٹ ورک انضمام اور کاروباری مطابقت پذیری کی حکمت عملی کی پالیسی نافذ کرکے فائدہ اٹھائے گا۔ گروپ مایا ای کامرس۔ تائی جی سن ہیلتھ، دی آل لیجنڈ انٹرنیشنل ٹورازم یونین، دی انٹرنیشنل ہوٹل الائنس ، سائیناکوایجوکیشن اینڈ ٹریننگ، انٹرنیشنلیی وو،پوائنٹس، ای والٹس اور تجربوں پر مبنی دیگر بڑے پیمانے کے ہیلتھ کئیر پلیٹ فارمز کی طرح بیلٹ اینڈ روڈ کے علاقوں میں ترقی کو مضبوط بنانے کا خواہاں ہوگا۔ کراس پلیٹ فارم مارکیٹنگ اور سروس انضمام ٹیئنز گروپ کے خاندان کے لیے دولت کی تخلیق کے فلسفے کو دنیا بھر میں فروغ دینے میں مدد کے لیے پیش کیا جائے گا، یوں کاروباری اداروں کے متنوع عالمی اتحاد کو فروغدنیا کا معروف چینی برانڈ بنانے میں مدد  دے گا۔

کئی ماہ کی محتاط منصوبہ بندی اور اعلیٰ سطحی تیاری کے بعدٹیئنز گروپ نے اپنی عالمی برانڈ حکمتعملی کو 2018ء میں اگلی سطح پر لے جانے پر زور دے گا جس میں یہ پریس کانفرنس نقطہ آغاز ہے۔ ٹیئنز گروپ کی نئی بین الاقوامیت کی حکمت عملی کے اعلان کے لیے گروپ چیئرمین لی جن یوان نے دنیا بھر سے ٹیئنز گروپ کے ایگزیکٹوز اور کاروباری نمائندوں کو جمع کرنے کا انتظام کیااور انہوں نے ذاتی طور پر نو تعینات شدہ ایگزیکٹو کی رہنمائی کی، جو فورچیون 500 ادارے  سے تعلق رکھتے ہیں اور اسٹیج پر ان کے ساتھ رہے۔

ذریعہ:ٹیئنز گروپ

تصویری اٹیچمنٹ لنکس:http://asianetnews.net/view-attachment?attach-id=306162

ٹیئنز گروپ نے نوجوان نسل کو ہدف بناتے ہوئےعالمی برانڈنگ کی نئی حکمت عملی کا آغاز کردیا

تیانجن، چین، 2 فروری ، 2018 / سنہوا-ایشیا نیٹ / – 28 جنوری 2018ء کو ٹیئنز گروپ کے چیئرمین لی جن یوان نے ٹیئنز گروپ ہیڈکوارٹر تیانجن میں پریس کانفرنس کی اور دنیا بھرمیں اپنی برانڈنگ حکمت عملی اور گروپ کو مزید بہتر بنانے کا اعلان کیا۔ ٹیئنز گروپ کی جانب سے یہ اس سال کی پہلی کانفرنس تھی جس میں 6,000سے زیادہ افراد نے شرکت کی ۔ 30 کے پیٹے میں موجود نوجوان نسل پر توجہ مرکوز کرتےہوئے ٹیئنز گروپ کی بین الاقوامی توسیع اور نئی برانڈنگ کی حکمت ٹیئنز کی نئی حکمت عملی کو نئی شروعات، نئے طریقوں ،نئے کاروباری نمونوں اور نئے مستقبل کے موضوعات کی تکمیل کرے گی، جبکہ ہموار بین الاقوامی توسیع کو برقرار رکھے گی۔ ٹ

یئنز گروپ کا قیام 1995 میں عمل میں آیا۔ اپنے قیام کے 23 برس میں ادارہ ایک ننھی نجی انٹرپرائز سے آج ایک بین الاقوامی گروپ کا روپ دھار چکا ہے۔ اس وقت ٹیئنز گروپ کی دنیا کے ایک سو دس ممالک اور خطوں میں شاخیں ہیںجو بایوٹیکنالوجی، ہیلتھ مینجمنٹ، ہوٹل اور سیاحت، تعلیم و تربیت، ای-کامرس، بین الاقوامی تجارت اور مالیات جیسے شعبوں میں دنیا بھر کے 190 سے زیادہ ممالک کی مارکیٹوں کا احاطہ کرتے ہیں۔

ٹیئنز گروپ کی عالمی برانڈنگ حکمت عملی کانفرنس کا آغاز سینئر ڈائریکٹر آف گروپ برانڈز اور انٹرنیشنل پبلک ریلیشنزکیرل ہوینگ نے کیا۔ ہوینگ نے وضاحت کی کہ ٹیئنز گروپ کی مارکیٹ تحقیق نے اسے 30 سال کی نوجوانوں عورتوں کی جانب برانڈنگ توجہ مبذول کروانے کی طرف رہنمائی کی ہے اور ٹیئنز گروپ اپنی نئی برانڈنگ حکمت عملی کی ترویج کے لیے اپنی کوششوں کو آگے بڑھائے گا۔ کانفرنس میں ٹیئنز گروپ نے اپنے نئے برانڈ لوگو / وی آئی/ سی آئی،نئی اور پہلے سے بہتر پراڈکٹ پیکیجنگ اور نئی آفیشل ویب سائٹ کی بھی رونمائی کی۔ کمپنی کی نئی ڈیجیٹل مارکیٹنگ حکمت عملی ہر شعبے پر لاگو کی گئی ہے، جو ٹیئنز گروپ کے ترقی و تعاون کے مواقع میں دلچسپی رکھنے والے عالمی صارفین کو تعمیل کے واضح خیالات، تبادلہ خیال کے لیے ایک دوستانہ کمیونٹی اور مارکیٹنگ کے مواقع فراہم کررہی ہے۔

کانفرنس کے دوران ٹیئنز گروپ برانڈ کی بنیادی اقدار پر بھی زور دیا گیا، جن میں عالمی مارکیٹوں پر توجہ، عمل درآمد کو تحریک دینا اور مقامی برادری کی محبت، صحت اور ان کے لیے خدمات انجام دینے کے ٹیئنز گروپ کا برانڈ مشن شامل ہیں۔

ٹیئنز گروپ کی برانڈنگ حکمت عملی کی مجموعی طور پر بہتری اور اس کےکارپوریٹ سی آئی اوروی آئی سسٹمز کی بہتری ادارے کو دنیا میں ایک مثبت قوت بننے اور عالمی اتحاد قائم کرنے کے لیے نئی ساکھ دینا ممکن بنائے گی۔

ٹیئنز گروپ کی نئی سیلیز ٹیان ایم اینڈ وائی ہائیڈرا سیریز ،جس نے 2017ء میں بیسٹ ٹیسٹ ایوارڈ جیتا تھا ، سالانہ انرجی اسکن کئیر پروڈکٹ ایوارڈ، (چین اور عالمی چینی برادریوں کو خدمات دینے والی ایک معروف آن لائن میڈیا کمپنی سینا کارپوریشن کی جانب سے) کی تقریب میں پہلی بار عوامی سطح پر رونمائی کی گئی، جو حاضرین کی خوشی کا باعث بنی۔

کانفرنس سے پہلے ذرائع ابلاغ کو دیے گئے انٹرویو میں چیئرمین لی جن یوان نے 2018ء میں ٹیئنز گروپ کی عالمی توسیع کے لیے مواقع پر بات کی اور کہا کہ “اس سال عالمی اقتصادی انضمام اور معلوماترجحان بن جائیں گے۔ ٹیئنز گروپ اپنے نیٹ ورکس کے انضمام اور کاروباری تحریک حاصل کرنے کے لیے بگ ڈیٹا اور کلاؤڈ کمپیوٹنگ ٹیکنالوجیز کا استعمال کرتا ہے، جو 224 ممالک اور خطوں کا احاطہ کرنے والے 21 علاقوں پر مشتمل ہے اور دنیا کے پانچ براعظموں میں اثر و نفوذ پاتے ہوئے چین کے بیلٹ اینڈ روز منصوبے کو پورا کر رہی ہے۔ٹیئنز گروپ کی ‘باہر جانے’ کی ہی نہیں بلکہ ‘اندر لانے’ کی حکمت عملی بھی کاروبار کو یقینی بنانے، ملازمتوں کو تحفظ دینے، صحت و تحفظ کو فروغ دینے، اور ترقی کو یقینی بنانے کے لیے متنوع منصوبوں کی آمد کا سبب بن رہی ہے۔

چینی نژاد امریکی رچرڈ شا جو پہلے دنیا کے بڑے سیلز گروپ  کے پورٹ فولیو برانڈ مینجمنٹ اور اسٹریٹیجک پلاننگ کے نائب صدر رہ چکے ہیں ، نے حال ہی میں ٹیئنز گروپ کو بحیثیت جنرل مینیجر جوائن کیا ہے اور کانفرنس میں بھی شرکت کی۔ شا نے کہا کہ چئیرمین لی جن یوان کا کاروباری تنوع،نیٹ ورک انضمام اور کاروباری مطابقت پذیر ماحولیاتی نظامبین الاقوامی تعامل کے لیے ایک تجارتی میکانزم تشکیل دیتا ہے۔ یہ بلاشبہ ایک منفرد حکمت عملی ہے جو ایک نمایاں کاروباری نمونے اور برانڈ ترقی کا رحجان بننے کی صلاحیت رکھتی ہے۔

دبئی میں ٹیئنز گروپ کی پیشرفت کے حوالے سے، جس کا ذکر دبئی کے سی اے ٹی وی پر ہوا، چئیرمین لی نے کہا کہ ٹیئنز گروپ 2000ء کے اوائل سے دبئی میں خدمات انجام دے رہا ہے۔ مقامی روایات و ثقافتکا بھرپور احترام کرتے ہوئے ٹیئنز گروپ نے دبئی صارفین کے گروپ کا درست تعین کیا، بنیادی طور پر نوجوانوں کی مارکیٹ کو ہدف بنایا اور ٹیئنز گروپ کی مصنوعات کی قدر و اہمیت پر صارفین کو واقعتاً مطمئن کرنے کے لیے تجربے کی بنیاد پر مارکیٹنگ فراہم کی۔ یہ حکمت عملی دبئی میں ٹیئنز برانڈ کے اثر ورسوخ کو پھیلانے اوریہاں اپنی شناخت حاصل کرنے میں اہمثابت ہوگی۔ مستقبل میں ٹیئنز گروپ ٹیئنز او ای ایمز، او ڈی ایمز، یہاں تک کہ خطے سے ٹیئنز کی مصنوعات کی پڑوسی علاقوں بشمول یورپ، مشرق وسطیٰ اور شمالی افریقہ میں فراہمی کے لیے نقل و حمل، گوداموں اور تقسیم کے نظام کے لیے بھیدبئیکی انتہائی مستحکم او ای ایم اور او ڈی ایم صنعتوں کا فائدہ اٹھائے گا۔

مستقبل سے حوالے سے چیئرمین لی نے زور دیا کہ ٹیئنز گروپ اپنی بین الاقوامی برانڈ ساکھ کو ثقافتی طور پر منفرد خصوصیت کے ساتھ اختیار کرے گا اور نیٹ ورک انضمام اور کاروباری مطابقت پذیری کی حکمت عملی کی پالیسی نافذ کرکے فائدہ اٹھائے گا۔ گروپ مایا ای کامرس۔ تائی جی سن ہیلتھ، دی آل لیجنڈ انٹرنیشنل ٹورازم یونین، دی انٹرنیشنل ہوٹل الائنس ، سائیناکوایجوکیشن اینڈ ٹریننگ، انٹرنیشنلیی وو،پوائنٹس، ای والٹس اور تجربوں پر مبنی دیگر بڑے پیمانے کے ہیلتھ کئیر پلیٹ فارمز کی طرح بیلٹ اینڈ روڈ کے علاقوں میں ترقی کو مضبوط بنانے کا خواہاں ہوگا۔ کراس پلیٹ فارم مارکیٹنگ اور سروس انضمام ٹیئنز گروپ کے خاندان کے لیے دولت کی تخلیق کے فلسفے کو دنیا بھر میں فروغ دینے میں مدد کے لیے پیش کیا جائے گا، یوں کاروباری اداروں کے متنوع عالمی اتحاد کو فروغدنیا کا معروف چینی برانڈ بنانے میں مدد  دے گا۔

کئی ماہ کی محتاط منصوبہ بندی اور اعلیٰ سطحی تیاری کے بعدٹیئنز گروپ نے اپنی عالمی برانڈ حکمتعملی کو 2018ء میں اگلی سطح پر لے جانے پر زور دے گا جس میں یہ پریس کانفرنس نقطہ آغاز ہے۔ ٹیئنز گروپ کی نئی بین الاقوامیت کی حکمت عملی کے اعلان کے لیے گروپ چیئرمین لی جن یوان نے دنیا بھر سے ٹیئنز گروپ کے ایگزیکٹوز اور کاروباری نمائندوں کو جمع کرنے کا انتظام کیااور انہوں نے ذاتی طور پر نو تعینات شدہ ایگزیکٹو کی رہنمائی کی، جو فورچیون 500 ادارے  سے تعلق رکھتے ہیں اور اسٹیج پر ان کے ساتھ رہے۔

ذریعہ:ٹیئنز گروپ

تصویری اٹیچمنٹ لنکس:http://asianetnews.net/view-attachment?attach-id=306162

‫ثریا نے سنگاپور ایئر شو 2018ء سے قبل نئے ایرو صارفین حاصل کرلیے

دبئی، متحدہ عرب امارات، 2 فروری 2018ء/پی آرنیوزوائر/– ثریا ٹیلی کمیونی کیشنز کمپنی آئندہ سنگاپور ایئرشو میں اپنی فضائی سیٹیلائٹ کمیونی کیشنز سروس، ثریا ایرو، پیش کرے گی اور فضائیات کے شعبے کے ماہرین سے ملاقاتیں کرے گی۔ ثریا کی ٹیم، ایس ایم پی ایوی ایشن کے شراکت دار کے ساتھ، اس پوری نمائش میں بوتھ نمبر ایچ-91 پر موجود ہوگی، جو 6 سے 11 فروری تک چانگی ایگزیبیشن سینٹر میں ہوگی۔https://prnewswire2-a.akamaihd.net/p/1893751/sp/189375100/thumbnail/entry_id/1_08h4quol/def_height/400/def_width/400/version/100011/type/1

(لوگو: https://mma.prnewswire.com/media/600865/Thuraya_Telecommunications_Company_Logo.jpg)

ثریا ایرو چند ماہ قبل اپنے اجراء کے بعد سے سمیٹی گئی کامیابیوں  کی بدولت اس ایئرشو میں بہت سی امیدوں کے ساتھ آ رہا  ہے۔ سٹ اسپورٹس کے ساتھ فکسڈ اور روٹری ونگ ہوائی جہازوں کے بیڑے میں تنصیب اور خدمات کی تکمیل کے مفاہمت کی ایک یادداشت پر بھی دستخط ہوئے تھے۔ سٹ جزیرہ نما آئبیریا میں کھیلوں کی تقریبات کو ٹریکنگ، گرافکس، ریڈیو، ایویونکس اور ٹیلی کمیونی کیشنز میں بہترین ٹیکنالوجی فراہم کرتا ہے۔ سٹ کا مقصد ان مواقع کو لائیو اسٹریم کرنے کے لیے سیٹیلائٹ کمیونی کیشنز سروس کا استعمال ہے۔ یہ سٹ کے لیے مسلسل کنیکٹیوٹی کو یقینی بنائے گا جو ٹی وی نیٹ ورکس کے لیے ہائی-ریز فوٹیج جمع کررہا ہے، دریں اثناء مختلف اور کسٹمائزیبل ایئرٹائم پیکیجز میں آپریشنل لاگت کو کم کرنے میں مدد دے رہا ہے۔ اکتوبر 2017ء میں ڈچ ایروسپیس سروسز کمپنی – این ایل ای اے ایس پی ایئر – دبئی ایئرشو کے دوران ثریا ایرو کی شریک  بنی جہاں اس سروس نے حکومتوں، ہوا بازی اور عالمی انٹرپرائز اداروں کے لیے کئی مثبت خبریں پیدا کیں۔ ثریا کے ابتدائی صارف این ایل ای اے ایس پی ایئر  نے اپنی آئی ایس آر اور یورپی بارڈر ایجنسی کے ساتھ دیگر نگرانی سے متعلقہ مشنز کے لیے ایرو سروس کے ساتھ معاہدہ کیا۔

کیتھ مرے، ثریا پروڈکٹ مینیجر برائے ایرو نے کہا کہ “سنگاپور ایئرشو  ایروسپیس صنعت سے تعلق رکھنے والوں کے لئے ایک کلیدی نمائش ہے اور ہماری نظریں مرکوز ہیں کہ کس طرح ہماری خدمات قدر میں اضافہ کرتی ہیں اور دوران پرواز کنیکٹیوٹی ضروریات کے لیے بہترین ہیں۔ ثریا ایرو دورانِ پرواز چھوٹے اور درمیانے حجم کے طیاروں کے لیے سیٹیلائٹ کمیونی کیشنز صلاحیتوں کے معیار کو بڑھاتا ہے۔ یہ بلٹ ان وڈیو کمپریشن کے ساتھ اپنی نوعیت کا واحد ٹرمینل ہے اور 700 کے بی پی ایس کی ایچ ڈی اسٹریمنگ رفتار تک سنبھالنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ ہمیں یقین ہے کہ ہم آئندہ صارفین کے سامنے عملی مظاہرہ کر سکیں گے کہ ہماری خدمات کس طرح مناسب ترین نرخوں پر مارکیٹ میں دستیاب بہترین آپریشنل کارکردگی اور لچک پیش کرتی ہیں۔”

ایک دوران پرواز کمیونی کیشنز نظام کے طور پر تیار کیا گیا ثریا ایرو چھوٹے اور درمیانے حجم کے طیاروں کے ساتھ ساتھ روٹری ونگ جہازوں میں بھی مستحکم انٹرنیٹ رسائی، وائس کالز، ٹیکسٹ میسیجنگ اور ریئل ٹائم، تیز رفتار ڈیٹا ایپلی کیشنز جیسا کہ وڈیو کانفرنسنگ اور فضائی نگرانی کو سہارا دیتا ہے۔ ثریا نے یہ سروس معروف ایروسپیس حل فراہم کرنے والوں کے بین الاقوامی مجموعے ایرو گروپ کے تعاون سے تیار کی، جس میں کوب ہیم، اسکاٹی گروپ، ایس آر ٹی وائرلیس شامل ہیں اور ایس ایم پی ایوی ایشن پیش پیش ہے۔

ایس ایم پی ایوی ایشن کے چیف ایگزیکٹو آفیسر مینفریڈ شیئرنگ نے کہا کہ “ثریا ایرو صنعت کے ایسے کرداروں کے مستحکم گروہ نے مل کر ایجاد کیا ہے جو ہوا بازی کے شعبے میں متحرک رابطہ کاری، حفاظت اور ٹیکنالوجی ضروریات کی جامع معلومات رکھتے ہیں۔ ہم نے اپنے آغاز کے بعد سے غیر معمولی کشش دیکھی ہے اور پہلے ہی مختلف صارفین کے ساتھ معاہدے کر چکے ہیں۔ ہمیں یقین ہے کہ ثریا ایرو کا سنگاپور ایئرشو میں زبردست خیرمقدم ہوگا اور ہماری نظریں علاقائی صارفین کے ساتھ ملاقاتوں پر مرکوز ہیں۔ ہمیں توقع ہے کہ تقریب کے دوران کلیدی شراکت داریاں ہوں گی۔”

ذریعہ: ثریا سیٹیلائٹ ٹیلی کمیونی کیشنز کمپنی

‫چینی ٹیم – ڈونگ فینگ ریس ٹیم وولوو اوشن ریس 2017-18ء میں وکٹوریا ہاربر کامیاب

ہانگ کانگ، 31 جنوری 2018ء/سنہوا-ایشیانیٹ/– وولوو اوشن ریس 2017-18ء کا میلبرن سے ہانگ کانگ تک چوتھا مرحلہ مکمل ہوچکا ہے، سات ٹیمیں ہانگ کانگ، چین پہنچ چکی ہے۔ چین کی ٹیم – ڈونگ فینگ ریس سخت مقابلے میں دوسرے نمبر پر آئی، یوں واحد ٹیم بنی جو آج تک مسلسل چار مرتبہ اعزاز سے نوازی گئی۔ ہانگ کانگ میں ڈونگ فینگ ریس ٹیم بندرگاہ کے اندر ریس میں گرینڈ چیمپیئن بھی بنی۔

28 جنوری کو، بندرگاہ کے اندر کی ریس مکمل ہونے کے بعد، چیف ایگزیکٹو ہانگ کانگ محترمہ کیری لیم، کائی ٹیک کروز ٹرمینل پر ڈونگ فینگ پویلین کے دورے پر آئیں، تاکہ ڈونگ فینگ موٹر کارپوریشن کے رہنماؤں اور ڈونگ فینگ ریس ٹیم کے عملے سے تبادلہ خیال کریں۔ انہوں نے اس خواہش کا اظہار کیا کہ ڈونگ فینگ ریس ٹیم – عرشے پر سب سے بڑے چینی عملے کی حامل چین کی ٹیم، ملک کے لیے جیت سکتی ہے۔ دریں اثناء، انہوں نے ریس میں چین کے لیے عالمی معیار کی کشتی رانی کے باصلاحیت افراد کو مضبوط بنانے کی کوششوں میں ڈونگ فینگ کارپوریشن کو بھی سراہا۔

ہانگ کانگ میں قیام کے دوران ڈونگ فینگ ریس ٹیم کے اسپانسر ڈونگ فینگ موٹر کارپوریشن نے مقامی کاروباری شخصیات، اپنے اسٹریٹجک شراکت داروں، ڈیلرز اور ہانگ کانگ اور جنوب مشرقی ایشیا کے میڈیا دوستوں کے ساتھ سرگرمیوں کا ایک سلسلہ منعقد کیا۔

وولوو اوشن ریس 2017-18ء کے راستے میں ایک مقام کی حیثیت سے ہانگ کانگ ڈونگ فینگ کمرشل گاڑیوں کے لیے ایک اہم مارکیٹ ہے۔ 2017ء میں ہانگ کانگ میں ڈونگ فینگ کمرشل گاڑیوں کی فروخت میں گزشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں 45 فیصد اضافہ دیکھنے کو ملا۔ مارکیٹ شیئر 10 فیصد تک پہنچا۔ فروخت کا حجم بڑے پیمانے پر بڑھنے کے ساتھ چینلوں کی تیاری، بعد از فروخت سروسز اور ساکھ کی تعمیر کے معاملے میں بھی زبردست پیشرفت کی گئی۔ 29 جنوری کی صبح ڈونگ فینگ کمرشل وہیکل نے اپنا سالانہ اجلاس ہانگ کانگ میں منعقد کیا، جہاں اس نے ہانگ کانگ میں یورو6 معیار پر نئی ڈونگ فینگ کے آر کا باضابطہ اجراء کیا اور اپنے ہانگ کانگ ڈیلر کے ساتھ اپنے 2018ء سالانہ تعاون معاہدے کی تجدید کی۔

وولوو اوشن ریس اور اپنے عالمی اثر و رسوخ کو مضبوط کرکے ڈونگ فینگ موٹر کارپوریشن تجویز کردہ “بیلٹ اینڈ روڈ، آپ کے ساتھ” کے منصوبے کو مزید گہرا کرتا اور پھیلاتا ہے۔ ڈونگ فینگ موٹر کارپوریشن کا عالمی برانڈ اثر و رسوخ اور ساکھ رفتہ رفتہ بہتر ہو رہی ہے، اور تمام شراکت داروں کے وسائل بتدریج مکمل ہو رہے ہیں۔ ڈونگ فینگ موٹر کارپوریشن اس عمل میں مزید کاروباروں کو تیار کرے گا اور ہانگ کانگ اور ہدف پر موجود دیگر عالمی مارکیٹوں میں برانڈ  کی ساکھ کو بہتر بنائے گا۔

یکم فروری کو وولوو اوشن ریس گوانگچو، چین پہنچے گی جہاں ڈونگ فینگ موٹر کارپوریشن گوانگچو میں پریس ریلیز تقریبات منعقد کرے گی اور ڈونگ فینگ ریس ٹیم کو اپنے مسکن میں خوش آمدید کہے گی۔

ذریعہ: ڈونگ فینگ موٹر کارپوریشن

تصویری اٹیچمنٹ لنکس:
http://asianetnews.net/view-attachment?attach-id=306006

‫گوانگ سی آسیان اکنامک اینڈ ٹیکنالوجیکل ڈیولپمنٹ زون: اصلاحات میں مستقل آگے کی جانب قدم، ترقی کے نئے ابواب کی تعمیر

ناننگ، چین، 22 جنوری 2018/سنہوا-ایشیانیٹ/– گوانگ سی چوانگ خود مختار علاقے میں ناننگ کے وسط سے صرف 30 کلومیٹر کے فاصلے پر حسن و جادو کی سرزمین ہے۔ گزشتہ چند دہائیوں سے یہ علاقہ ناقابل یقین انداز میں غیر ملکی چینیوں کے مسکن سے قومی سطح کے اقتصادی و ٹیکنالوجیکل ترقیاتی علاقے میں تبدیل ہوا، اور علاقے میں اپنے انوکھے مقام کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اور ترقی پسندانہ خیالات کے ساتھ گوانگ سی خطے میں سب سے زیادہ تیزی سے ابھرتے ہوئے ترقیاتی علاقوں میں سے ایک بن چکا ہے۔

2004ء میں بننے والا گوانگ سی آسیان اکنامیکل اور ٹیکنیکل ڈیولپمنٹ زون مارچ 2013ء میں قومی سطح کا اقتصادی و ٹیکنالوجیکل ترقیاتی علاقہ بنا۔ زرعی معیشت کی طرف رحجان رکھنے والے چینی خطے کی حیثیت سے آغاز کرنے والے اس علاقے نے وقت کے ساتھ ساتھ خود کو بہتر بنایا اور آگے بڑھتا گیا اور آج اس کا ڈیولپمنٹ زون ایک ایسے شہر میں تبدیل ہو چکا ہے، جو کام اور رہائش دونوں کے لیے واقعتاً موزوں ہے۔

حالیہ چند سالوں میں گوانگ سی آسیان اکنامک اینڈ ٹیکنالوجیکل ڈیولپمنٹ زون کے صنعتی ڈھانچے نے “صنعتوں کے ذریعے شہر کی ترویج، شہر کے ذریعے صنعتوں توسیع، شہر اور صنعتوں کے درمیان انضمام” کے ترقیاتی اصول کی پاسداری کی، صنعتوں کو جمع کرنے کے اپنے منصوبے کی رفتار برقرار رکھی اور اپنی کوششوں کو فوڈ پروسیسنگ، بایومیڈیسن اور مشینری مینوفیکچرنگ کی تین صنعتوں پر مرتکز کیا۔ بڈویزر، شوانگوئی گروپ، یونی پریزیڈنٹ اور مختلف معروف اداروں نے یہاں مرحلہ وار اپنے کام کا آغاز کیا، جس نے بالائی اور زیریں دونوں دھاروں میں صنعتی زنجیر کے دیگر اداروں کی بھی رہنمائی کی۔ مزید برآں، ڈیولپمنٹ زون نے گوانگ سی چوانگ خود مختار خطے کے محکمہ زراعت کے ساتھ شراکت داری کی کہ وہ “زرعی سلیکون ویلی” بنائے، جو پہلے ہی 19 جدید زرعی ماڈل منصوبوں کے ساتھ جڑیں پکڑ چکی ہے جیسا کہ گوانگ سی سیری کلچر کی بنیادی تنصیب۔ خوبصورت ماحولیاتی وسائل کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ڈیولپمنٹ زون ایک جدید خدماتی ڈھانچے کو بھی مضبوط کر رہا ہے جو تفریحی سیاحت اور بزرگوں کی دیکھ بھال کی صنعت کے گرد گھوم رہا ہے، جس کی مثال تیہے- پیور لینڈ کمیونٹی کی عملی بنیاد میں ملتی ہے، ایسا منصوبہ جو دس ارب رینمنبی کی کل سرمایہ کاری رکھتا ہے اور پہلے ہی اپنے پہلے مرحلے کی تعمیرات مکمل کر چکا ہے۔ جیسا کہ ناننگ ایجوکیشن انڈسٹری پارک اور گوانگ سی ووکیشنل اسکلز پبلک پریکٹس بیس منصوبوں کے مطابق چل رہے ہیں، شہری ترقی کی حکمت عملی، ترقیاتی سمت اور ڈیولپمنٹ زون کے صنعتی خاکے کے ساتھ ہموار اور مرحلہ وار انداز میں منسلک ہو جائیں گے شہر اور صنعت کے درمیان انضمام کو ترویج بھی دیں گے۔

مستقبل میں گوانگ سی آسیان اکنامک اینڈ ٹیکنالوجیکل ڈیولپمنٹ زون یہ توازن برقرار رکھے گا اور ایک تجارت-، رہائش- اور صنعت-دوست شہر کی تخلیق کے راستے میں “صنعتی ترقی” اور “ماحولیاتی تعمیر” دونوں کی ضروریات پورے کرے گا، جہاں منظر اور باغات خوبصورت ہوں اور جہاں تجارتی خواب بھی حقیقت کا روپ دھاریں۔

ذریعہ: گوانگ سی آسیان اکنامک اینڈ ٹیکنالوجیکل ڈیولپمنٹ زون

تصویری منسلکات کے روابط:
http://asianetnews.net/view-attachment?attach-id=305231
http://asianetnews.net/view-attachment?attach-id=305232

جامعات چین میں جدت طرازی کی دوڑ میں پیش پیش

ہانگچو، چین، 19 جنوری 2018ء/سنہوا-ایشیانیٹ/– مہلک ایچ 7این9 برڈ فلو وائرسے سمیت متعدی امراض سے تحفظ کے لیے کیے گئے کام کو تسلیم کرتے ہوئے پروفیسر لی لانجوان کی زیر قیادت ٹیم کو 8 جنوری 2018ء کو چین کے نیشنل سائنس اینڈ ٹیکنالوجی پروگریس ایوارڈز کے موقع پر گرینڈ پرائز سے نوازا گیا۔

چائنیز اکیڈمی آف انجینیئرنگ (سی ای اے) کی رکن لی چی جیانگ یونیورسٹی (زیڈ جے یو) کے میڈیکل اسکول کے فرسٹ ایفیلیئٹڈ ہاسپٹل میں متعددی امراض کی تشخیص و علاج کی کلیدی تجربہ گاہ کے ڈائریکٹر کی حیثیت سے خدمات انجام دیتی ہیں۔

ایوارڈ ملک میں ٹیکنالوجیکل کارکردگی کو تسلیم کرنے کی اعلیٰ ترین سطح ہے۔ لی اور ان کی ٹیم نے وبائی امراض سے تحفظ اور علاج کے لیے ایک جدید نمونہ تیار کیا، اور 2013ء میں ایچ 7 این9 برڈ فلو وائرس کے پھیلاؤ سے تحفظ اور اسے قابو کرنے میں کامیابی حاصل کی۔ یہ پہلا موقع تھا کہ چینی سائنس دانوں نے آزادانہ طور پر ایک بڑی وباء کو روکا۔

2003ء میں سارس کے پھیلاؤ کے دوبارہ روکنے سے بچنے ہی میں نہیں، بلکہ لی کے طریقے نے تب سے مرس اور زیکا جیسے حالیہ عالمی بحرانوں کے خلاف چین کو تحفظ دینے میں بھی مدد دی۔ قابل ذکر ہے ایبولا کے خلاف ان کی غیر معمولی کارکردگی جس نے اس نئے طریقے کو عالمی سطح پر اثرات مرتب کرنے دیے۔ لی اور ان کی ٹیم کے تخلیق کردہ طریقے کو عالمی ادارۂ صحت (ڈبلیو ایچ او) کی جانب سے بین الاقوامی سطح پر پیروی کے لیے مثال کے طور پر سراہا گیا۔

زیڈ جے یو پروفیسرزکے تین دیگر منصوبے 2017ء سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ایوارڈ کے ساتھ سراہے گئے۔ شنگھائی رینکنگ کے مطابق گزشتہ پانچ سالوں میں سنگ ہوا یونیورسٹی ملک بھر میں کل 37 قومی سائنس و ٹیکنالوجی ایوارڈز کے ساتھ سرفہرست رہی، جس کے بعد زیڈ جے یو، سیان جیاؤتونگ یونیورسٹی اور پیکنگ یونیورسٹی ہیں۔

1897ء میں قائم ہونے والی زیڈ جے یو چین میں جدید اعلیٰ تعلیم کے قدیم ترین اداروں میں سے ایک ہے اور معروف جامعات میں سے ایک بن چکی ہے۔ تازہ ترین ای ایس آئی (اسینشل سائنس انڈیکیٹرز) اعداد و شمار زیڈ جے یو کو 18 شعبوں میں سرفہرست 1 فیصد عالمی اداروں اور دیگر سات شعبوں میں سرفہرست 100 میں شمار کرتے ہیں، اور اسے چینی جامعات میں دوسرے نمبر پر دیکھ رہے ہیں۔

“جدت طرازی کو ہماری جامعہ کے عالمی معیار کا ادارہ بننے کے عمل میں ہمیشہ کلیدی مسابقتی برتری اور روح کا مقام حاصل رہا ہے، وو چاؤہوئی، صدر زیڈ جے یو نے کہا “حالیہ چند سالوں میں چی جیانگ یونیورسٹی انوکھے شعبوں کی وسیع اقسام کو مستحکم کرچکی ہے اور بین الاقوامی سطح پر اہم سائنسی تحقیق کی بڑی تعداد کو فروغ دے چکی ہے۔”

2016ء میں انسٹیٹیوٹ آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی انفارمیشن آف چائنا کی جاری کردہ چینی سائنس-ٹیکنالوجی پیپر کی اعداد و شمار رپورٹ زیڈ جے یو کو اعلیٰ تعلیم کے مقامی اداروں کی کئی فہرستوں میں شامل کرتی ہے۔ دریں اثناء، زیڈ جے یو کے کھاتے میں 6231 مقالے ایس سی آئی میں موجود ہیں، جو اسے چین کا رہنما بنا رہے ہیں۔ زیڈ جے یو 1738 کے ساتھ ملک میں کسی بھی جامعہ سے زیادہ ایجادات کے پیٹنٹ رکھتی ہے۔

“ہمارے پاس لی جیسی کئی جدت طراز ٹیمیں ہیں، “پروفیسر یان جیانہوا، نائب صدر جامعہ نے کہا۔ حالیہ چند سالوں میں ملک کی جدت طرازی سے تحریک پاتی ہوئی ترقی کو فروغ دینے کی سمت متحرک انداز میں سفر ہوا ہے۔ اعلیٰ سطح کے ڈیزائن کو بہترین بنانے، بنیادی تحقیق کو آگے بڑھانے اور اعلیٰ ٹیکنالوجی کی صنعت کاری کے ہدف کے ساتھ چین ایسا ماحول تخلیق کرنے کی کوشش کرتا رہا جو ٹیکنالوجیکل جدت طرازی کےلیے سازگار ہے۔ نتیجتاً اعلیٰ تعلیمی اداروں میں محققین کو زیادہ متحرک،تخلیقی اور جدت طراز رہنے کی حوصلہ افزائی کی گئی۔

چینی جامعات کی جدت طرازی گنجائش کے حوالے سے چین کی وزارت سائنس و ٹیکنالوجی کی حالیہ مانیٹرنگ رپورٹ نے ظاہر کیا کہ یہ پالیسی تبدیلی چینی جامعات کو طبعی توسیع  سے معیاری پیشرفت کی منتقلی کی طرف لائی، جس نے سائنس اور ٹیکنالوجیکل جدت طرازی میں تیزی سے ترقی کی رہنمائی کی۔ اس ہدف کی تکمیل کی گنجائش بہتر بنانے، باصلاحیت افراد کو سنوانے اور انہیں سیر حاصل نتائج کی طرف منتقل کرنے کو خاص طور پر نمایاں کیا گیا۔

وزارت تعلیم کی 2017ء کی ٹاپ 10 سائنٹیفک اینڈ ٹیکنالوجیکل پروگریس آف چائنیز یونیورسٹی اینڈ کالجز نے زیڈ جے یو کے پروفیسر چین ینمن کی قیادت میں ایک ٹیم کو پیش کیا، جنہوں نے تیز رفتار ٹرین کی حفاظت کے تجربے کے لیے ایک متحرک نظام تیار کیا۔

ریلوے لائنوں کی تنصیب کا جائزہ لینے کا ایک طریقہ تیار کرتے ہوئے وہ ٹرین سروس کو معطل کیے بغیر ٹریک کی مرمت میں درپیش مشکلات سے نمٹے اور پہلے ہی چین بھر میں اثرات مرتب کر چکے ہیں۔ اس کا اطلاق اب جنگھو (بیجنگ-شنگھائی)، ہوننگ (شنگھائی-نانجنگ) اور ہوہانگ (شنگھائی-ہانگچو) ریلویز پر تعمیر و مرمت میں دیکھا جا سکتا ہے، ساتھ ہی ہانگچو اور ننگو جیسے شہروں میں زیر زمین نظاموں میں بھی۔ ایسی ٹیکنالوجیکل پیشرفت دور رس اثرات مرتب کرے گی کیونکہ چین ایک مشترکہ مستقبل کے لیے برادری کی تعمیر کی خاطر دنیا تک جاتا ہے۔

وو نے زور دیا کہ “جدت طرازی ترقی کا سب سے بڑا محرک ہے۔ جامعات کو استحکام جدت طرازی کی بنیاد پر ترقی کے استحکام اور پیش پیش محرک کا ذریعہ ہونا چاہیے۔”

ملک کے ٹیکنالوجیکل اثرات کے عالمی سطح پر اثرات کے ساتھ وو مانتے ہیں کہ مستقبل میں زیڈ جے جو ترقی کے بین الاقوامی محاذ پر ہوگی، اپنی صلاحیتوں کو نئی سرحدوں تک پہنچائے گی اور چین میں رہنما کی حیثیت سے جامعات کی جاری مسابقت میں اپنی صلاحیتوں کو بڑھائے گی۔

ذریعہ: چی جیانگ یونیورسٹی (زیڈ جے یو)

تصویری منسلکات کے روابط: http://asianetnews.net/view-attachment?attach-id=305167