ہیلیاٹیک کی شفاف شمسی فلمیں رنگین شیشوں سے بجلی پیدا کرنے کو ممکن بنائیں گی

ڈریسڈن، جرمنی، 15 جون 2012ء/پی آرنیوزوائر–

نامیاتی فوٹووولٹیکس کے شعبے میں ٹیکنالوجی رہنما ہیلیاٹیک جی ایم بی ایچ نے اعلان کیا ہے کہ اس کی شفاف شمسی فلمیں دہرے شیشے کی حامل کھڑکیوں میں شیشوں کے درمیان نصب کی جا سکتی ہیں۔ یہ کھڑکیاں رنگ دار شیشے کی طرح لگیں گی جو عجیب نقوش اور ناہمواریوں کے بغیر ایک یکساں سطح کے ذریعے سولر فلموں کے لیے بخارات کو محفوظ کرنے کی بے مثال ٹیکنالوجی فراہم کرتی ہیں۔

(تصویر: http://photos.prnewswire.com/prnh/20120615/537895)

ہیلیاٹیک اپنی سولر فلم ٹیکنالوجی کو مصنوعات میں شامل کرنے کے لیے شیشہ اور دیگر تعمیراتی مواد بنانے والے اداروں کے ساتھ کام کر رہا ہے۔ ہیلیاٹیک کے سی ای او تھیباڈ لی سیگوئیلون نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ “ہماری سولر فلمیں تمام اقسام کی تعمیراتی تکمیل کی ایپلی کیشنز کے لیے بے مثال اور زبردست کلیدی فوائد پیش کرتی ہیں۔  اس لیے ہمارا کاروباری ماڈل تعمیرات اور تعمیراتی مواد کی صنعت کے لیے کسٹمائزڈ سولر فلموں کے سب سے بڑا فراہم کنندہ بننا ہے۔ وہ ہماری سولر فلموں کو اپنی مصنوعات میں توانائی پیدا کرنے والے اجزا کی حیثیت سے شامل کریں گے۔”

ہیلیاٹیک کی انتہائی پتلی سولر فلمیں شیشے کے درمیان تنصیب کے لیے تیار ہیں۔ شفافیت کی سطح اور ساتھ ساتھ رنگ کو بھی صارفین کی ضروریات کے مطابق تبدیل کیا جا سکتا ہے۔ ایک تصدیق شدہ اور آزاد ٹیسٹنگ تنصیب ایس جی ایس اس پیمائش کی تصدیق کر چکی ہے کہ ہیلیاٹیک کے لیب سیلز بجلی کی ترسیل کی 23.5 فیصد سطح پر بھی 7 فیصد موثریت پیش کرتے ہیں۔ اس وقت ادارہ ڈریسڈن، جرمنی میں اپنی تجربہ گاہوں میں شفافیت کی سطح کو 40 فیصد تک لاسکتا ہے، اور 2014ء میں اگلی پروڈکشن لائن کے اجراء کے ساتھ تعمیراتی صنعت کے لیے فراہم کی جانے والی شفاف سولر فلموں کے لیے 50 فیصد تک اضافے کے امکانات کو دیکھتا ہے۔

ایس جی ایس پہلے ہی ایک اور پیمائشی مہم میں تصدیق کر چکا ہے کہ روایتی شمسی ٹیکنالوجیز کے مقابلے میں ہیلیا ٹیک کے سیل کی کم روشنی اور زیادہ درجہ حرارت پر کارکردگی زیادہ بہتر ہے۔ صرف 100 ڈبلیو/میٹر اسکوائرڈ شعاع ریزی پر موثریت 1000 ڈبلیو/میٹراسکوائرڈ پر ناپی گئی روایتی موثریت سے 15 فیصد زیادہ تھی۔ سیل موثریت بھی روایتی سولر ٹیکنالوجی کے مقابلے میں بڑھتے ہوئے درجہ حرارت پر مستقل رہتی ہے، روایتی ٹیکنالوجی کی موثریت بڑھتے ہوئے درجہ حرارت پر 15 سے 20 فیصد تک گر جاتی ہے۔ ہیلیاٹیک کے شریک بانی اور سی ٹی او ڈاکٹر مارٹن فائفر نے کہا کہ “ہماری پتلی اور ہلکے وزن کی سولر فلموں کو مختلف قسم کے تعمیراتی مواد میں برہ راست شامل کیا جا سکتا ہے، اس لیے انہیں لگانے کے لیے کوئی دوسرا ڈھانچہ لگانے کی ضرورت نہیں۔روایتی پی وی ٹیکنالوجیز کے مقابلے میں زیادہ درجہ حرارت پر اپنی موثریت برقرار رکھنے کے باعث ٹھنڈا رکھنے کی بھی ضرورت نہیں۔ اسی طرح اس کی کم روشنی پر صلاحیت کا مطلب ہے کہ فلم کی تعین بندی اور زاویے کی بھی ضرورت نہیں اور یہ ابر آلود، شمال کے رخ پر یا صبح اور شام میں بھی اپنی موثریت کو برقرار رکھتی ہے۔”

ہیلیاٹیک نے حال ہی میں کنکریٹ فیسیڈ کے الاسٹک مولڈز تیار کرنے والے معروف ادارے RECKLI کے ساتھ ایک مشترکہ ترقیاتی معاہدہ کیا ہے کہ وہ سولر فلموں کو اپنی کنکریٹ کی تعمیراتی دیواروں میں شامل کرے۔ یہ کنکریٹ کی عمودی دیواروں کو انتہائی موثریت شمسی توانائی پیدا کرنے والی جگہ میں تبدیل کر دے گا اور وہ بھی بغیر کسی اضافی ڈھانچے یا ٹھنڈے کرنے والے طریقے کے۔

ہیلیاٹیک کی کامیابی کی کلید چھوٹے نامیاتی سالمات – اولیگومرز- کا خاندان ہے جسے اولم، جرمنی میں اپنی تجربہ گاہ میں تیار اور تخلیق کیا گیا ہے۔ ہیلیاٹیک دنیا کی واحد سولر کمپنی ہے جو کم درجہ حرارت میں چھوٹے نامیاتی سالمات کو ذخیرہ کرنے، رول-ٹو-رول ویکیوم طریق کار کو استعمال کرتی ہے۔ اس کے شمسی چکر کے سیلز خالصیت اور یکسانیت کی نینومیٹر-پتلی سطحوں سے تیار کیے گئے ہیں۔ یہ ٹیکنالوجی انتہائی مستحکم او ایل ای ڈی ٹیکنالوجی (نامیاتی ایل ای ڈیز) سے بہت ملتی جلتی ہے لیکن یہ اس کے الٹ کام کرتی ہے کہ روشنی کو بجلی پیدا کرنے کے لیے استعمال کرتی ہے۔ یہ ہیلیاٹیک کو تیار شدہ دستیاب مشینوں تک رسائی، اور اسے فوری طور پر قابل بھروسہ اور بڑے حجم میں پیداواردیتی ہے۔

مزید http://www.heliatek.com پر

روابط برائے ذرائع ابلاغ:

اسٹیفنی روہر

ٹیلی فون (+49-351)213-034508

موبائل (+49-173)359-9693

steffanie.rohr@heliatek.com

نائجل رابن سن

ٹیلی فون: (+44-1481)233080

nigel@vortexpr.com

تصویر: http://photos.prnewswire.com/prnh/20120615/537895

ذریعہ: ہیلیاٹیک جی ایم بی ایچ

Leave a Reply