Tag Archives: Misc.

Visit of Islamic Republic of Iran Navy 57th Flotilla to Karachi

Karachi, October 10, 2018 (PPI-OT): Islamic Republic of Iran Navy 57th Flotilla comprising of Iranian Navy Ships BOUSHER (Tanker), KHANJAR and NIZEH (Patrol Crafts) made port call at Karachi on goodwill cum training visit. The ships were received by officials of Pakistan Navy, Defence Attache of Iran and consulate staff. The visit of IRIN Ships to Pakistan was aimed at enhancing collaboration and interoperability between the two Navies.

For more information, contact:
Directorate of Public Relations,
Pakistan Navy
Naval Headquarters, Islamabad, Pakistan
Tel: +92-51-20062326
Cell: +92-300-8506486
Website: www.paknavy.gov.pk

Umar Akmal summoned by Pakistan Cricket Board Anti Corruption Unit

Lahore, June 24, 2018 (PPI-OT): PCB’s Anti Corruption Unit (ACU) has summoned Test cricketer Umar Akmal on June 27. Akmal has been asked to appear in front of PCB ACU regarding his claims about a fixing approach made in a recent TV interview.

For more information, contact:
Media Manager
Pakistan Cricket Board (PCB)
Gaddafi Stadium, Lahore 54600, Pakistan
Tel: +9242 571 7231 -4
Fax: +9242 571 1860
Website: www.pcb.com.pk

ایکس سی ایم جی مشینیں آسٹریلیا کے بی ایچ پی مائننگ منصوبے میں پیش

XCMG Machines Breaks Monopoly and Brings onto BHP Mining Project in Australia.
XCMG Machines Breaks Monopoly and Brings onto BHP Mining Project in Australia.

سوچو، چین، 28 مئی 2018ء/پی آرنیوزوائر/– تعمیراتی مشینری بنانے والا دنیا کا معروف ادارہ ایکس سی ایم جی پلبارا، آسٹریلیا میں بی ایچ پی کی خام لوہا نکالنے کی بڑی کان میں ساز و سامان کی فراہمی کر رہا ہے۔ یہ سودا اس وقت سامنے آیا ہے جب ادارہ چین کے “بیلٹ اینڈ روڈ” منصوبے (بی اینڈ آر آئی) کے ساتھ واقع کلیدی مارکیٹوں میں ترقی جاری رکھے ہوئے ہے، جن میں کمبوڈیا، آذربائیجان اور ملائیشیا میں بنیادی ڈھانچے اور کان کنی کے منصوبے شامل ہیں۔

https://photos.prnasia.com/prnvar/20180528/2144420-1

ایکس سی ایم جی پلبارا میں بی ایچ پی کی سائٹ کو جی آر 3505 موٹر گریڈرز فراہم کر چکا ہے، جو خطے میں ادارے کی پانچ عالمی معیار کی لوہے کی کانوں میں سے ایک ہے اور سالانہ 275 ملین ٹن کی پیداوار رکھتی ہے۔ بی ایچ پی نے جانی مانی حرکت پذیری، کارگزاری، مؤثریت اور حفاظتی معیارات کی وجہ سے جی آر 3505 کا انتخاب کیا، جسے ایکس سی ایم جی نے بی ایچ پی اور آسٹریلیا کے کان کنی آلات کے معیارات پر پورا اتارنے کے لیے بہتر بنایا ہے۔

“ان چند اداروں میں سے ایک ہونے کی وجہ سے جو بڑے پیمانے پر آؤٹ ڈور کان کنی کے آلات بناتے ہیں، بی ایچ پی کے ساتھ ہماری شراکت داری ایک طاقتور اتحاد ہے۔” وانگ من، چيئرمین ایکس سی ایم جی نے کہا۔ “اس سودے نے، 2018ء کے آغاز میں آسٹریلیا میں ہماری نمو اور بی آر آئی کے ساتھ موجود مارکیٹوں ہماری توسیع کے ساتھ، ہمیں بین الاقوامی کان کنی سامان کے شعبے میں اپنا مارکیٹ حصہ بڑھانے میں مدد دی۔”

ایکس سی ایم جی پلبارا میں سائٹ پر سامان کی دیکھ بھال کی فراہمی کے لیے تکنیکی افراد کی ایک ٹیم بھی بھیج چکا ہے، جو کسی بھی مسئلے کی صورت میں فوری ردعمل کی ضمانت دے رہی ہے۔

دنیا کے سرفہرست 50 اداروں میں چھٹے درجے پر موجود مشینری سامان تیار کرنے والا ایکس سی ایم جی بین الاقوامی تعمیراتی منصوبوں کی وسیع اقسام میں حصہ لے چکا ہے، خاص طور پر بی اینڈ آر آئی کے ساتھ واقع خطوں میں کہ جہاں ہمہ گیر اور قابل بھروسہ تعمیراتی مشینری مصنوعات کی طلب ہر سال بڑھتی جا رہی ہے۔

  • ایکس سی ایم جی کمبوڈیا کی قومی شاہراہ 11 کی تعمیر نو کے منصوبے کے لیے واحد روڈ مشینری فراہم کنندہ ہے، جو 96.48 کلومیٹر طویل سڑک ہے اور وسطی کمبوڈیا میں شاہراہوں کے جال میں اہم ہے۔ ایکس سی ایم جی کمبوڈیا کی روڈ مشینری مارکیٹ میں سب سے بڑا حصہ برقرار رکھے ہوئے ہے۔
  • ایکس سی ایم جی نے آذربائیجان میں ایک بندرگاہ کے منصوبے میں مدد کے لیے ہوئسٹنگ سامان کے 34 حصے فراہم کر چکا ہے، جن میں تمام خطوں میں کام کرنے والی کرینیں، اسکڈ اسٹیئر لوڈرز اور ریچ اسٹیکرز شامل ہیں۔ چھ تکنیکی افراد کی ٹیم نے سامان کی تنصیب، جانچ اور تربیت میں مدد کے لیے 30روزہ خدمات فراہم کیں۔
  • ایکس سی ایم جی کی کرینیں ملائیشیا کی مشرقی ساحلی ریلوے کی تعمیر میں خدمات فراہم کر رہی ہیں، جو بی اینڈ آر آئی کے ساتھ واحد سب سے بڑا منصوبہ ہے۔

ایکس سی ایم جی کے بارے میں

ایکس سی ایم جی ایک کثیر القومی بھاری مشینری بنانے والا ادارہ ہے جو 74 سال کی تاریخ رکھتا ہے۔ یہ اس وقت عالمی تعمیراتی مشینری صنعت میں چھٹا درجہ رکھتا ہے۔ ادارہ دنیا بھر کے 177 سے زیادہ ممالک اور خطوں کے لیے برآمدات کرتا ہے۔

مزید معلومات کے لیے ملاحظہ کیجیے: www.xcmg.com، یا فیس بک، ٹوئٹر، یوٹیوب، لنکڈان اور انسٹاگرام پر ایکس سی ایم جی کے صفحات۔

تصویر – https://photos.prnasia.com/prnh/20180528/2144420-1

‫چائنا انٹرنیشنل بگ ڈیٹا انڈسٹری ایکسپو 2018ء گوئیانگ میں شروع

گوئیانگ، چین، 27 مئی 2018ء/پی آرنیوزوائر/– چائنا انٹرنیشنل بگ ڈیٹا انڈسٹری ایکسپو 2018ء جنوب مغربی چین کے صوبے گوئچو کے دارالحکومت گوئیانگ میں 26 مئی کی صبح شروع ہوگئی۔ دنیا کی پہلی بگ ڈیٹا نمائش کی حیثیت سے بگ ڈیٹا ایکسپو 2015ء میں شروع ہوئی تھی اور 2017ء میں قومی سطح کی تقریب بن گئی۔ اس سال کی نمائش دیگر شعبوں کے ساتھ بگ ڈیٹا کی شمولیت پر توجہ رکھتی ہے اور دو کانفرنسوں، ایک نمائش، ایک مقابلے اور دیگر سرگرمیوں کا احاطہ کرے گی۔

بگ ڈیٹا ایکسپو کے علاوہ چائنا ای-کامرس انوویشن اینڈ ڈیولپمنٹ سمٹ بھی اس دوران منعقد ہوگی۔ بگ ڈیٹا کے شعبے جدید ترین ٹیکنالوجی اور مصنوعات دکھانے کے لیے ایک پیشہ ورانہ ایک نمائش اور دیگر شعبہ جات اور مصنوعی ذہانت کے ساتھ بگ ڈیٹا کی جدت طراز انداز میں شمولیت پر ایک عالمی مقابلہ ہوگا۔ نئے خیالات، مشقوں، مصنوعات اور بگ ڈیٹا صنعت کے کاروباروں پر دیگر مخصوص سرگرمیاں بھی ہوں گی۔

چار روزہ تقریب میں 40,000 مہمانوں میں گلوبل 500 کمپنیوں کی 30 معروف علمی شخصیات اور رہنماؤں کے ساتھ ساتھ 400 نمائش کنندگان اور ابلاغی ادارے بھی حصہ لیں گے۔ تقریب کی اہم ترین سرگرمیوں کے علاوہ وہ افتتاحی و اختتامی تقاریب، کانفرنسوں، آٹھ اعلیٰ سطحی مذاکروں اور ڈجیٹل چین کی تعمیر کے لیے علم و حکمت جمع کرنے کے لیے 50 سے زیادہ فورمز میں شرکت کریں گے۔

نمائش دنیا کی سب سے بڑی واحد-ڈش ریڈیو دوربین، جسے فائیو-ہنڈریڈ-میٹر اپرچر اسفیئریکل ریڈیو ٹیلی اسکوپ (فاسٹ) کہا جاتا ہے، کی سپر ڈیٹا کمپیوٹنگ صلاحیتوں اور ٹیکنالوجیکل اطلاق، ففتھ-جنریشن ٹیلی کام ٹیکنالوجیوں اور دنیا بھر میں دیگر جدید ٹکینالوجیوں کے اطلاق کا مظاہرہ کرے گی۔40 مقامی اور غیر ملکی بگ ڈیٹا ادارے نمائش میں شرکت کریں گے، جس میں غیر ملکی حکومتوں اور اسرائیل، روس، ملائیشیا، آسٹریلیا، اٹلی، فرانس اور جنوبی کوریا سے ادارے بھی شامل ہوں گے۔

چائنا انٹرنیشنل بگ ڈیٹا انڈسٹری ایکسپو 2018ء گوئیانگ میں شروع

گوئیانگ، چین، 26مئی 2018ء/سن ہوا-ایشیانیٹ/– چائنا انٹرنیشنل بگ ڈیٹا انڈسٹری ایکسپو 2018ء جنوب مغربی چین کے صوبے گوئچو کے دارالحکومت گوئیانگ میں 26 مئی کی صبح شروع ہوگئی۔ دنیا کی پہلی بگ ڈیٹا نمائش کی حیثیت سے بگ ڈیٹا ایکسپو 2015ء میں شروع ہوئی تھی اور 2017ء میں قومی سطح کی تقریب بن گئی۔ اس سال کی نمائش دیگر شعبوں کے ساتھ بگ ڈیٹا کی شمولیت پر توجہ رکھتی ہے اور دو کانفرنسوں، ایک نمائش، ایک مقابلے اور دیگر سرگرمیوں کا احاطہ کرے گی۔

بگ ڈیٹا ایکسپو کے علاوہ چائنا ای-کامرس انوویشن اینڈ ڈیولپمنٹ سمٹ بھی اس دوران منعقد ہوگی۔ بگ ڈیٹا کے شعبے جدید ترین ٹیکنالوجی اور مصنوعات دکھانے کے لیے ایک پیشہ ورانہ نمائش اور دیگر شعبہ جات اور مصنوعی ذہانت کے ساتھ بگ ڈیٹا کی جدت طراز انداز میں شمولیت پر ایک عالمی مقابلہ ہوگا۔ نئے خیالات، مشقوں، مصنوعات اور بگ ڈیٹا صنعت کے کاروباروں پر دیگر مخصوص سرگرمیاں بھی ہوں گی۔

چار روزہ تقریب میں 40,000 مہمانوں میں گلوبل 500 کمپنیوں کی 30 معروف علمی شخصیات اور رہنماؤں کے ساتھ ساتھ 400 نمائش کنندگان اور ابلاغی ادارے بھی حصہ لیں گے۔ تقریب کی اہم ترین سرگرمیوں کے علاوہ وہ افتتاحی و اختتامی تقاریب، کانفرنسوں، آٹھ اعلیٰ سطحی مذاکروں اور ڈجیٹل چین کی تعمیر کے لیے علم و حکمت جمع کرنے کے لیے 50 سے زیادہ فورمز میں شرکت کریں گے۔

نمائش دنیا کی سب سے بڑی واحد-ڈش ریڈیو دوربین، جسے فائیو-ہنڈریڈ-میٹر اپرچر اسفیئریکل ریڈیو ٹیلی اسکوپ (فاسٹ) کہا جاتا ہے، کی سپر ڈیٹا کمپیوٹنگ صلاحیتوں اور ٹیکنالوجیکل اطلاق، ففتھ-جنریشن ٹیلی کام ٹیکنالوجیوں اور دنیا بھر میں دیگر جدید ٹکینالوجیوں کے اطلاق کا مظاہرہ کرے گی۔40 مقامی اور غیر ملکی بگ ڈیٹا ادارے نمائش میں شرکت کریں گے، جس میں غیر ملکی حکومتوں اور اسرائیل، روس، ملائیشیا، آسٹریلیا، اٹلی، فرانس اور جنوبی کوریا سے ادارے بھی شامل ہوں گے۔

ذریعہ: چائنا انٹرنیشنل بگ ڈیٹا انڈسٹری ایکسپو 2018 آرگنا ئزنگ کمیٹی

China International Big Data Industry Expo 2018 opened in Guiyang

GUIYANG, China, May 27, 2018 /PRNewswire/ — China International Big Data Industry Expo 2018 opened in Guiyang, capital city of southwest China’s Guizhou Province, on the morning of May 26. As the world’s first big data expo, the Big Data Expo was initiated in 2015 and elevated to a national event in 2017. This year’s expo centers on integration of big data with the other sectors and will cover two conferences, one exhibition, one contest and other activities.

In addition to the Big Data Expo, the China E-Commerce Innovation and Development Summit will also be held during the period. There will be a professional exhibition to display the latest technologies and products of the big data sector and a global contest on the innovative integration of big data with other sectors and artificial intelligence. Other specific activities on new concepts, practices, products and businesses of the big data industry will also be held.

About 40,000 guests including over 30 leading academicians and leaders of Global 500 companies, as well as 400 exhibitors and media organizations will participate in the four-day event. In addition to the major activities of the event, they will attend the opening and closing ceremonies, conferences, eight high-level dialogues and over 50 forums to pool wisdom on building a digital China.

The expo will display the super data computing capabilities and technological applications of the world’s largest single-dish radio telescope, namely China’s Five-hundred-meter Aperture Spherical Radio Telescope (FAST), applications of the 5th-generation telecom technologies and other state-of-the-art technologies worldwide. About 40 domestic and overseas big data firms will participate in the exhibition, with a group debut of exhibitors from foreign governments and enterprises from Israel, Russia, Malaysia, Australia, Italy, France and South Korea.