2013ء کے صدارتی اسٹیٹ آف دی یونین خطاب میں سرفہرست ترجیح کے حامل اعضاء کی تجدیدی بحالی کے پیٹنٹ مالک ڈاکٹر رونگ سیانگ نے انسانوں میں اپنی تجدید اعضاء کی کامیاب ٹیکنالوجیز کا اعلان کردیا

لاس اینجلس، 27 جون 2013ء/پی آرنیوزوائر — ڈاکٹر رونگ سیانگ سو اور ان کی ملکیتی ٹیکنالوجیز کے لیے قائم ہونے والے ادارے میبو انٹرنیشنل نے آج خراب ہونے والے اعضاء کو دوبارہ بنانے کے لیے اپنی مکمل ملکیتی ٹیکنالوجیز کا اعلان کردیا ہے تاکہ حکومتوں اور غیر سرکاری ادارے اپنے نئے سائنسی نظام کے ذریعے بنی نوع انسان کو جلد از جلد فائدہ پہنچا سکیں۔ ڈاکٹر سو “خراب ہونے والے اعضاء کی تجدید کے لیے ادویات کی تیاری” کے حوالے سے ٹیکنالوجیز کے پیٹنٹ مالک ہیں، جو حیاتی سائنس کی پیشرفت پر ایک ترجیحی حکمت عملی ہے جس کا حوالہ اوباما کی 2013ءصدارتی اسٹیٹ آف دی یونین خطاب میں بھی دیا گیا، اور وہ نئے سائنسی نظام “انسانی عضاء کی درست انداز میں تجدید کی سائنس” کے موجد اور بانی بھی ہیں۔

13 فروری 2013ء کو امریکی صدر نے اپنے اسٹیٹ آف دی یونین خطاب میں حیاتی سائنس کی تقرری کے لیے “خراب اعضاء کی تجدید کے لیے ادویات کی تیاری” کو سرفہرست ترجیحی حکمت عملی قرار دیا جو ڈاکٹر سو کے سائنسی نظام کا حصہ ہے۔

ڈاکٹر سو نے کہا کہ “امریکی حکومت نے خراب ہوجانے والے انسانی اعضاء کی بحالی و تجدید کے لیے ہمارے عملی سائنس کے طریقے پرقدم رکھا ہے، اور اسٹیم سیل، جین اور ٹشو انجینئرنگ پر بنیادی اکتشافی تحقیق کے دور سے نکل رہی ہے، اور تمام ممالک کے لیے ایک مثال بن رہی ہے، ساتھ ساتھ اشارہ بھی دے رہی کہ امریکی عوام جدید ادویات کے ذریعے نہ ٹھیک ہونے والے عضوی امراض کے نقصانات سے چھٹکارہ پانے والی پہلی قوم ہوں گے۔”

ڈاکٹر سو کی ایجاد کردہ “انسانی اعضاء کی درست تجدید کی سائنسحیاتی سائنس کا ایک نیا نظام ہے جو انسانی عضو میں خراب، پرانے، مردہ یا سرطان زدہ خلیات کی جگہ نئے خلیے تخلیق کرنے کے لیے تجدیدی غذائیت سے بھرپور اجزاء کے ملاپ کو استعمال کرتا ہے ، تاکہ بیمار اعضاء کو دوبارہ تخلیق کیا جا سکے اور اس کے عام ڈھانچے اور کارگزاری کو بحال کیا جا سکے یا اس کی زیادہ جوان حالت پر تجدید کی جا سکے۔

ڈاکٹر سو نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ “انسانی عضو کی درست خطوط پر تجدید کی سائنس میں استعمال ہونے والا مادہ دراصل تجدیدی غذائیات کا مرکب ایک غذائی فارمولا ہے، کوئی کیمیائی دوا نہیں۔اس میں سلامتی و حفاظت کے کوئی مسائل نہیں اور اس کی براہ راست  توثیق، ترویج اور اطلاق کیا جا سکتا ہے۔ ہر کوئی داخلی اعضاء کی درست تجدید کو جان سکتا ہے جب تک کہ وہ اپنی خوراک میں تجدیدی غذا شامل کرے گا۔”

ڈاکٹر سو خراب اعضاء کی تجدید کا ہدف حاصل کرچکے ہیں۔ ڈاکٹر سو نے کہا کہ “ہم امریکہ میں اپنی ملکیتی اعضاء کی تجدیدی سائنس اور ٹیکنالوجی کا اعلان کر رہے ہیں، اس امید پر کہ امریکی حکومت اور صدر جلد ہی “انسانی اعضاء کی تجدیدی سائنس و ٹیکنالوجی” کی توثیق اور اطلاق کریں گے، جسے ہم نے انسانی اعضاء کی بیماریوں کے علاج اور لوگوں کو فائدہ پہنچانے کے لیے ایجاد کیاہے۔”

بقواط نے 2500 سال پہلے جدید طب کی بنیاد رکھی، اور بنی نوع انسان کی صحت کے لیے تاریخی و عظیم خدمات انجام دیں۔ لیکن انسانی اعضاء کی بیماریوں کا علاج کرنا حیاتی و طبی سائنسدانوں کے لیے ہمیشہ ایک بڑا چیلنج اور ہدف رہا ہے۔

گزشتہ نصف صدی میں ٹیکس دہندگان انسانی اعضاء کے امراض کے علاج کی تلاش کے لیے تحقیق پر کئی ارب ڈالرز دے چکے ہیں، لیکن اب تک انہیں نتیجہ کچھ نہیں ملا۔ مزید برآں انسانی اعضاء کے امراض کے علاج کے لیے کوئی وقت بھی متعین نہیں جیسا کہ “بابائے انسانی جین” پروفیسر جیمز واٹسن نے 21 مئی 2013ء کو کہا کہ عملی جین تحقیق بے سود ہے۔

ڈاکٹر سو کہتے ہیں کہ “تجدیدی غذائی اجزاء کے خوراکی ملاپ کو استعمال کرتے ہوئے ہم پہلے ہی خراب انسانی اعضاء کی تجدید کے ساتھ ساتھ قبل از وقت کمزور پڑ جانے والے انسانی اعضاء کی تجدید میں بھی کامیابی حاصل کر چکے ہیں۔ ہمارے ذہن میں ہے کہ ہم سائنسدان سائنس میں اپنے ہدف کو پہلے ہی حاصل کر چکے ہیں، اور اب یہ ریاست کے رہنماؤں، حکومتوں اور بااثر شخصیات کی ذمہ داری ہے کہ وہ لوگوں کو بچانے کے لیے نئے سائنسی نظام کو استعمال کرے۔ حکومت کو اعضاء کی تجدید کی سائنس میں تحقیق و پیشرفت پر مزید سرمایہ کاری کرنے کی ضرورت نہیں؛ وہ مفاد عامہ کے لیے ہماری انسانی اعضاء کی درست تجدیدی سائنس کی عملی ٹیکنالوجی استعمال کر سکتی ہے۔”

ڈاکٹر سو کے تجدید اعضاء کے کامیاب منصوبوں کی مثالیں ذیل میں درج ہیں:

ایک: جدا ہونے والی انگلی کی درست طریق پر بحالی کی ٹیکنالوجی

طبی تاریخ میں ایک کٹی ہوئی انگلی کو جوڑنا ناممکن رہا ہے، جو انسانی اعضاء کی تجدید کے حصول کا ایک تسلیم شدہ نشان ہے، اور ساتھ ساتھ انسانی اعضاء کی ازسرنو تخلیق پر تحقیق کے موجودہ تمام شعبوں سے آگے جانے کی سائنسی علامت بھی۔ ہم زخم کے شکستہ حصے پر باقی ماندہ اہم بافتوں (بشمول ہڈیوں کے بافتے) کے ذریعے اور غذائی ملاپ کے مرہم کے ساتھ کٹی ہوئی انگلی کے گمشدہ حصے کی دوبارہ تخلیق میں کامیابی حاصل کر چکے ہیں۔ کٹی ہوئی انگلی کے معاملے میں جو مکمل طور پر دوبارہ بحال نہ کی جا سکتی ہو، انگلی کے متاثرہ حصے کو  پھر بھی  نئی جراحی کے ذریعے عام حالت میں لایا جا سکتاہے۔

بنیادی طریقہ: متاثرہ انگلی کی شکستہ سطح کے بافتوں کے تمام اقسام کے خلیات کو مکمل طور پر اسٹیم سیلز میں تبدیل کیا گیا جو مکمل انسانی اسٹیم سیل ڈیولپمنٹ کے طریقوں کے مطابق تمام اقسام کے متاثرہ بافتوں سے مرحلہ وار اصلی انگلی بنائے گی۔

دو: کمزور نظام انہضام کی تجدید کی ٹیکنالوجی

ہر کوئی نظام انہضام کے اعضاء کی قبل از وقت کمزوری کے بارے میں جانتا ہے لیکن کچھ کرنے سے قاصر ہے۔ نظام انہضام کی کمزوری فرد کی عمر سے تعلق رکھتی ہے، انسانی جسم میں دیگر اعضاء سے 20 سال پہلے۔ انسانی جسم کی مجموعی زندگی کو دیکھتے ہوئے نظام انہضام کی قبل از وقت کمزوری سب سے سنجیدہ مرض ہے کیونکہ اس کا براہ راست نتیجہ ہر عضو کو غذائیت اور توانائی کی فراہمی میں کمی کی صورت میں نکلتا ہے۔ نظام انہضام کے اعضاء کی قبل از وقت کمزوری سے ہر عضو کی قوت اور زندگی کو براہ راست متاثر کرتی ہے اور یہ مختلف اعضاء کے امراض کا سبب ہے۔ اگر تجدیدی سائنس کے ذریعے انسانی نظام انہضام کے اعضاء کو قبل از وقت کمزوری سے بچایا جائے تو یہ بنی نوع انسان کی بڑی خدمت ہوگی۔ ہم ان اعضاء کی تجدیدی خوراک کے کیپسول استعمال کرنے کے ذریعے قبل از وقت کمزور ہونے نظام انہضام کی تجدید میں کامیابی پا چکے ہیں، جس نے 60 سالہ فرد کے نظام انہضام کے اعضاء کو نوجوان کے نظام جیسا بنانا ممکن بنایا ہے۔

بنیادی طریقہ: نظام انہضام کی تجدید کے لیے خوراک قبل از وقت کمزور اعضاء اور بافتوں کو اسٹیم سیل ڈیولپمنٹ کارگزاری دوبارہ حاصل کرنے اور کمزور اور فائبروٹک خلیات کی جگہ لینے کے لیے نئے خلیات کی تخلیق اور عضو کو خلیات کی بڑی تعداد کے قبل از وقت خاتمے سے معمور کردیتی  ہے، اور قبل از وقت کمزور پڑ جانے والے نظام انہضام کو ڈھانچے اور کارگزاری دونوں کے لحاظ سے جوانی کی حالت پر بحال کردیتی ہے۔ منسلکہ تصویر ایک سالہ عمل کا نتیجہ ہے جو 40 سال کے ایک فرد پر کی گئی (تصویر۔ 1)

(تصویر: http://photos.prnewswire.com/prnh/20130627/LA39022-b)

One%20year%20regenerative%20rejuvenation%20results%20for%2040%20year%20old%20person. 2013ء کے صدارتی اسٹیٹ آف دی یونین خطاب میں سرفہرست ترجیح کے حامل اعضاء کی تجدیدی بحالی کے پیٹنٹ مالک ڈاکٹر رونگ سیانگ نے انسانوں میں اپنی تجدید اعضاء کی کامیاب ٹیکنالوجیز کا اعلان کردیا

One year regenerative rejuvenation results for 40 year old person.

تین: معدے و آنتوں کے زخم کا تجدیدی علاج

معدے اور آنتوں کے زخم سخت امراض ہیں اور بسا اوقات پلٹ کر واپس بھی آتے ہیں۔ گو کہ موجودہ طب ادویات کے استعمال کے ذریعے ان زخموں کو بھر سکتا ہے لیکن اعضاء اپنی اصل شکل اور کارگزاری کو کھو بیٹھتے ہیں کیونکہ داغ پڑجانے کی وجہ سے وہ  جگہ مرض کے ایک مرتبہ پھر لوٹ آنے اور اکثر نظام انہضام میں خرابی کا سبب بنتی ہے۔ اس لیے معدے اور آنتوں کا زخم ایسا مرض نہیں ہے جس کا مکمل علاج ہو جائے۔ نظام انہضام میں زخم یعنی السر کے دوبارہ پیدا ہونے کے لیے ہمارے تجدیدی غذائی اجزاء کے کیپسول سے زخم مکمل طور پر بھر جائے گا اور نظام انہضام کے عام بافتوں کی صورت اختیار کرلے گا یعنی نشان چھوڑے بغیر مکمل طور پر بھر جائے گا۔

بنیادی طریقہ: نظام انہضام کے زخموں کے لیے تجدیدی غذائی مرکب کے ذریعے السر کے بافتوں کو مرحلہ وار پگھلایا اور خودکار طور پر زخم پر اتارا جاتا ہے جس میں رہتے ہوئے زخم کے بافتوں کے خلیات اسٹیم سیل میں تبدیل ہوتے ہیں اور اسٹیم سیل ڈیولپمنٹ کے عمل کے بعد مکمل طور پر جسم کے اجزا میں تبدیل ہو جاتے ہیں۔

چار: اکلیلی امراض قلب (سی ایچ ڈی) کا تجدیدی علاج

دل کے دیگر امراض کی طرح سی ایچ ڈی انسانوں جانوں کا سب سے بڑا قاتل ہے۔ یہ انسانوں کے لیے مستقل خطرہ ہے کیونکہ یہ پیچیدہ ہے، گو کہ اسٹینٹ یا بائے پاس جراحی کے ذریعے عارضی طور پر آرام مل جاتا ہے اور زندگی بچ جاتی ہے۔ ہماری کارڈیک آرگن تجدیدی ٹیکنالوجی تجدیدی طور پر سی ایچ ڈی کو کو بحال کر دیتی ہے جس اسٹینٹ یا بائے پاس سرجری کے مقابلے میں کوئی نشان نہیں بنتا۔

بنیادی طریقہ: دل کے لیے تجدیدی غذائی مرکب کے اثر کے تحت دل کی شریانوں اور پٹھوں میں موجود تمام فائبروٹک خلیات مرحلہ وار مکمل طور پر تجدیدی نئے خلیات میں تبدیل ہوتے ہیں، اور دل کی شریانوں میں خون کی فراہمی کا عمل بہتر ہوتا ہے اور پٹھے جوان زندگی اور ڈھانچے کے حامل ہو جاتے ہیں۔

پانچ: چہرے کے داغوں کے لیے تجدیدی بحالی کی ٹیکنالوجی

چہرے پر موجود داغ کاحامل فرد جسمانی اور ذہنی دونوں اعتبار سے اپنی زندگی سے پریشان ہوتا ہے ۔ جلدی تجدیدی بحالی کی ٹیکنالوجی ہزاروں افراد کو مکمل جلدی اعضاء کی بحالی کے ذریعے خوش و خرم زندگی گزارنے کا موقع دیتی ہے۔

بنیادی طریقہ: جلد کے لیے تجدیدی غذائی مرکب کے اثر کے تحت خلیے کی موت کے ایک عمل سے گزرتے ہیں، جبکہ جلد کی بافتوں کے باقی ماندہ خلیات اسٹیم سیل کارگزاری کرتے ہیں یوں مکمل طور پر نئی جلد کی تجدید ہوتی ہے۔

چھ: تجدیدی ادویات اور جلنے، زخم، السر اور ذیابیطس کے زخموں کا علاج

جلد کے جلنے، حادثاتی زخموں کے نشانات، السرز، ذیابیطس کے زخموں وغیرہ کے لیے تجدیدی بحالی کی ٹیکنالوجی عالمی طبی علاج میں مرکزی ٹیکنالوجی ہے۔ 2004ء میں معروف سویڈش پریس کارگر نے ہمارے مونوگراف برنز ری جنریٹو میڈیسن اینڈ تھراپی کو شایع کیا جس نے واضح کیا کہ زخم بذات خود نہیں بھرتا، جیسا کہ جلدی سطح پر زخموں کا نشان، السر، ذیابیطس کے زخم وغیرہ، بلکہ اس کا علاج جلنے کے گہرے زخموں کے لیے تجدیدی علاج سے ہو سکتا ہے۔ اب تک 73 ممالک نے جلی ہوئی جلد کے لیے تجدیدی علاج کو لاگو کیا ہے۔ امریکہ میں تجدیدی غذائی مرکب برائے جلد مرحلہ II ایف ڈی اے طبی تجربے کو مکمل کرنے کے قریب ہے۔ امریکی حکومت کی جانب سے ایف ڈی اے توثیق کے عمل کی رفتار بڑھانے کی توقع ہے اور وہ امریکی مریضوں کو جلدی تجدید کے فوائد جلد سمیٹنے میں مدد دے سکتی ہے۔

بنیادی طریقہ: جلنے کے گہرے زخموں کے لیے جلد کے  تجدیدی مادّے کی حیثیت سے انحطاطی بافتوں کو پگھلایا اور مزید کسی نقصان سے نکالا جا سکتا ہے؛ جلنے کی جگہ پر بافتوں کو بحال کیا جاتا ہے؛ اور ایک خاص ماحول بنایا جاتاہے جہاں باقی ماندہ زندہ رہنے کے قابل بافتوں کے خلیات کو مکمل طور پر تجدیدی اسٹیم خلیات میں تبدیل کیا جا سکتا ہے۔ اسٹیم سیلز کے نمو کے طریقوں کے بعد تجدیدی اسٹیم سیلز مکمل طور پر جلدی بافتوں اور اعضاء میں تبدیل ہو جاتے ہیں۔ طریقہ دیگر اقسام کے زخموں پر بھی لاگو ہوتا ہے۔

سات: چہرے اور گردن کی جلد کے لیے تجدیدی ٹیکنالوجی

انسانوں کے معیار زندگی میں بہتری کی وجہ سے اب ادھیڑ عمر افراد بھی نوجوانوں جیسی قوت اور جذبے کے حامل ہیں، لیکن ان کے چہرے اور گردن کی جلد لازماً قبل از وقت بڑھاپے کو ظاہر کرتی ہے۔ ادھیڑ عمر یا زائد العمر افراد کے لیے بہتر ہوگا کہ وہ آئینہ نہ دیکھیں؛ بصورت دیگر انہیں اپنے حلیے کے باعث اعتماد میں کمی محسوس ہوگی، اور یہ ان کے معیار زندگی پر بداثرات مرتب کر سکتا ہے۔ چہرے اور گردن کی جلد کے لیے ہماری تجدیدی ٹیکنالوجی سن رسیدہ جلد کو جوانی کی حالت پر واپس لے آتی ہے۔

بنیادی طریقہ: سن رسیدہ جلد کے لیے تجدیدی اجزاء کی کارگزاری میں پہلے مرحلے میں جلد کے بنیادی خلیات کی تجدیدی صلاحیت کو بحال کیا جاتا ہے اور اس کے بعد منتشر ریشوں کو بنڈل کی صورت میں دوبارہ قائم کیا جاتا ہے، یوں بافتی خلیات کی مکمل تجدیدی کارگزاری صلاحیت کو جگایا جاتا ہے اور عمر رسیدہ جلدی خلیات کی جگہ مکمل نئے جلدی خلیات پیدا کیے جاتے ہیں، اس طرح جلد کے ڈھانچے اور کارگزاری کو بحال کیا جا سکتا ہے۔ منسلکہ تصویر تجدیدی ٹیکنالوجی کے بانی رونگ سیانگ سو کی جانب سے لیے گئے نتائج کو ظاہر کرتی ہے (تصویر۔ 2)

(تصویر: http://photos.prnewswire.com/prnh/20130627/LA39022-a)

آٹھ: تجدیدی سرطان مخالف ٹیکنالوجی

تجدیدی غذائیات کے مواد کے استعمال سے انسداد سرطان کی تحقیق نے خلیہ جاتی سطح پر کامیابی حاصل کی ہے البتہ جلدی سرطان کے علاوہ طب میں دیگر سرطانوں کے لیے مزید تحقیق کی ضرورت ہے۔ البتہ ہم نے انتہائی نوعیت کے سرطان کے مریضوں کی بغیر سرطان نکالے زندگی بڑھانے کے لیے تجربات کیے ہیں۔ اس لیے تجدید غذائیات کے استعمال سے انسداد سرطان ٹیکنالوجی جلدی سرطان یا آخری سرطان کے حامل مریضوں کے لیے فائدہ مند ہو سکتی ہے۔

بنیادی طریقہ: تجدیدی سرطان مخالف غذائی مرکب سرطان کے خلیوں کے مارنے کے ذریعے کیا جا سکتا ہے اور اسی دوران نامیاتی عمل کے فروغ اور عام خلیات میں تجدیدی گنجائش شروع کر کے کیا جا سکتا ہے۔

دنیا کے تمام ممالک کے رہنماؤں، حکومتوں اور سماجی انجمنوں کے ساتھ رابطے کو آسان بنانے کے لیے ڈاکٹر سو نے ایک عالمی رابطہ دفتر بنایا ہے:

پتہ: سٹی نیشنل پلازہ، 515 ایس فلاور اسٹریٹ ، 36 ویں منزل، لاس اینجلس، کیلیفورنیا 90071

ٹیلی فون: +1-213-236-3530

ای میل: usadmin@mebo.com

فیکس: +1-213-236-3766

ویب سائٹ: http://www.mebo-international.com/

رابطہ:

جین ویسٹ گیٹ: +1-336-209-9276، Jane@westgatecom.com

چیرل ریلے: +1-202-285-4222، cherylrileypr@comcast.net

Leave a Reply