Tag Archives: Artprice.com

‫آرٹ پرائس کی عالمی آرٹ مارکیٹ سالانہ رپورٹ 2016ء: اقتصادی منڈیوں کا حقیقی متبادل، چین کو سرفہرست مقام حاصل

پیرس، 27 فروری 2017ء / پی آر نیوز وائر / ہماری 16ویں عالمی آرٹ مارکیٹ سالانہ رپورٹ ایک مرتبہ پھر تھیری ایرمان کی قائم کردہ اور زیر ہدایت آرٹ مارکیٹ معلومات کے عالمی رہنما آرٹ پرائس اور وان جی کی ہدایت میں کام کرنے والے چینی ادارہ جاتی شراکت دار کے درمیان اتحاد کا ثمر ہے۔ اس کے نتیجہ عالمی آرٹ مارکیٹ کی رپورٹ کے طور پر سامنے ہے جو مغربی اور مشرقی آرٹ مارکیٹ دونوں ہی کے لیے قابل اعتماد بصیرت فراہم کرتی ہے۔

(لوگو: http://photos.prnewswire.com/prnh/20160228/338238LOGO)

آرٹ مارکیٹ کے انتہائی باریک بینی سے جائزے سے دونوں ہی اداروں نے اپنے وسائل مجتمع کیے۔ ان کے علاوہ کوئی دوسری انجمن یا ٹیم اس قابل نہیں کہ وہ اتنی ضخیم اقتصادی معلومات کے چھوٹے سے چھوٹے اور اعلیٰ معیار کو پرکھ سکے۔

رپورٹ میں آرٹ پرائس کی اب معروف ہو جانے والی سالانہ نیلامی آمدنی کے لحاظ سے سرفہرست 500 مصوروں کی درجہ بندی، مارکیٹ کے سرفہرست 100 نیلامی نتائج، کے ساتھ ساتھ فی ملک، فی مارکیٹ مرکز، فی تخلیقی عرصہ اور فی جمالیاتی وسیلہ متعدد تفصیلی تجزیے 21 ابواب شامل ہیں۔ آرٹ پرائس ڈاٹ کام سے مفت مفت ڈاؤنلوڈ کریں۔

http://zh.artprice.com/artprice-reports/zh-the-art-market-in-2016

4.8 ارب ڈالر کی مجموعی فروخت اور 91,400 لاٹس فروخت کے ساتھ چین ایک مرتبہ پھر عالمی رہنما بن چکا ہے

3.5 ارب ڈالر اور 72,500 لاٹس فروخت کے ساتھ امریکا دوسرے نمبر پر رہا

عالمی نیلامی کاروبار میں 17 فیصد حصص کے ساتھ برطانیہ تیسرے نمبر آیا

سال 2016 میں 675,500 لاٹس کی فروخت کے ساتھ عالمی نیلامی کاروبار کا مجموعہ 12.45 ارب ڈالر رہا

مغرب میں لاٹس کی فروخت میں 11 فیصد اضافہ ہوا (امریکا میں 24 فیصد اضافہ، برطانیہ میں 27 فیصد اضافہ)

دنیا بھر میں فروخت ہونے والی 96 فیصد لاٹس نے 50,000 ڈالرز سے کم قیمت وصول کی

نیو یارک (3.2 ارب ڈالر)، بیجنگ (2.3 ارب ڈالر)، لندن (2.1 ارب ڈالر) اور ہانگ کانگ (1.15 ارب ڈالر)

اس سال کا بہترین نتیجہ 81.5 ملین ڈالر آیا جو فرانسیسی مصور کلا مونے کی لا میولے (1981ء) کو حاصل ہوا

فروخت کے اعتبار سے 2016ء میں دنیا کے اولین مصور چینی مصور چینگ داچیان (355 ملین ڈالرز) رہے

دنیا بھر میں نیلامی کے لیے پیش کیے گئے فن پاروں کی تعداد میں 8 فیصد اضافہ ہوا

آرٹ مارکیٹ کی معلومات تک باآسانی رسائی، برقی فروخت، مارکیٹ کی اقتصادیات، تمام براعظموں میں فن پارے خریدنے والے نوجوان-طبقے کی بڑھتی ہوئی تعداد (1950ء میں نصف ملین سے 2016ء میں 70 ملین) سے مارکیٹ کی ترقی ممکن ہوئی۔

دنیا بھر میں عجائب گھروں کی تعداد میں بھی اضافہ ہوا (سالانہ 700 نئے عجائب گھر)، جو 21 ویں صدی کی ایک اہم اقتصادی حقیقت ہے۔ پچھلی دو دہائیوں کے مقابلے میں صرف 2000ء سے 2014ء میں کھلنے والے عجائب گھروں کی تعداد کہیں زیادہ ہے۔ بلاشبہ عجائب گھر کے معیار کے فن پاروں کی طلب عالمی آرٹ مارکیٹ کی اعلیٰ سطح پر طلب کے بنیادی محرکات میں سے ایک ہے۔ آرٹ مارکیٹ اب 10 اور 15 فیصد فی سال کے منافع کے ساتھ 100,000 ڈالرز سے زیادہ کی قدر رکھتی ہے۔

سال 2016 میں دو دیووں امریکا اور چین کے مقابلے میں چین نے 1.3 ارب ڈالر کی برتری کے ساتھ امریکا کو پیچھے چھوڑتے ہوئے ایک مرتبہ پھر مارکیٹ کا رہنما بن کر ابھرا ہے۔

اسی طرح سال کے 500 بہترین مصوروں کی فہرست میں 30 فیصد چینی (جبکہ صرف 15 فیصد امریکی) مصور شامل ہیں۔

منفی شرح سود کے باعث آرٹ مارکیٹ اپنے ہم عصر شعبے کے ساتھ واضح طور پر صحت مند دکھائی دیتی ہے اور گزشتہ 17 سالوں میں 1,490 فیصد ترقی اور ایک آرٹ ورک کی اوسط قدر میں 36 فیصد اضافہ براہ راست ترقی ظاہر کی ہے۔

تمام براعظموں میں واقع دنیا بھر کے6,300  نیلامی مراکز (97 فیصد منسلک) کے لیے اب انٹرنیٹ ہی آگے بڑھنے کا واحد ذریعہ ہے۔

آرٹ مارکیٹ ایک موثر، تاریخی اور عالمی منڈی ہے جس کا اقتصادی اور جغرافیائی سیاسیات کے مسائل سے نمٹنے کی صلاحیت شک سے بالاتر ہے۔

1987-2017 تھیری ایرمان

آرٹ پرائس کے بارے میں:

آرٹ پرائس یورونیکسٹ پیرس کی جانب سے یورولسٹ میں مندرج ہے، ایس آر ڈی لانگ آنلی اور یوروکلیئر: 7478 –بلوم برگ: پی آر سی – رائٹرز: اے آر ٹی ایف۔

آرٹ پرائس فن پاروں کی قیمت اور ان کے اشاریہ ڈیٹا بینکس میں عالمی رہنما ہے۔ یہ 30 ملین سے زیادہ اشاریے اور نیلامی نتائج رکھتا ہے جو 647,000 سے زائد مصوروں کا احاطہ کررہا ہے۔ آرٹ پرائس امیجز (ر) دنیا کے سب سے بڑے آرٹ مارکیٹ ذخیرے تک لامحدود رسائی دیتا ہے: سال 1700 سے لے کر آج تک کے فن پاروں کی 126 ملین تصاویر اور پرنٹس کا ذخیرہ، جس میں آرٹ پرائس کے فنی مورخین کے تبصرے بھی شامل ہیں۔

آرٹ پرائس 6,300 نیلام کنندگان کی جانب سے معلومات کے ذریعے اپنے ڈیٹابینکس کو مالا مال کرتا رہتا ہے اور دنیا کے اہم خبری اداروں اور لگ بھگ 7,200 بین الاقوامی پریس اشاعتوں کے لیے آرٹ مارکیٹ رحجانات کا مستقل بہاؤ شائع کرتا ہے۔ اپنے 4,500,000 اراکین کے لیے آرٹ کی خرید و فروخت کے لیے آرٹ پرائس دنیا کی معروف معیار بند مارکیٹ تک رسائی دیتا ہے۔

آرٹ پرائس کی کیمیا اور کائنات کو دریافت کریں http://web.artprice.com/video، جس کے صدر دفاتر معروف میوزیم آف کونٹیمپرری آرٹ، دی ایڈوبی آف کیوس میں ہیں http://goo.gl/zJssd

https://vimeo.com/124643720

https://www.facebook.com/la.demeure.du.chaos.theabodeofchaos999

http://twitter.com/artmarketdotcom

http://twitter.com/artpricedotcom

https://www.facebook.com/artpricedotcom

https://plus.google.com/+Artpricedotcom/posts

رابطہ: ہوزیتے مے: ای-میل: ir@artprice.com

تصویر: http://photos.prnewswire.com/prnh/20160228/338238LOGO

ذریعہ: Artprice.com

Artprice’s 2016 Global Art Market Annual Report: A Genuine Alternative to Financial Markets, with China in First Place

PARIS, February 27, 2017/PRNewswire/ —

Our 16th Global Art Market Annual Report is once again the fruit of an alliance between Artprice, the world leader in Art Market information, founded and directed by thierry Ehrmann, and Artron, its powerful Chinese institutional partner, directed by Wan Jie. The result is the only truly global art market report providing reliable insight into both the Western and the Eastern art market.

(Logo: http://photos.prnewswire.com/prnh/20160228/338238LOGO )

The two entities have pooled their resources to analyse the global Art Market in unprecedented detail.  No other organisation or team is currently capable of processing and interpreting such high quality macro- and micro-economic big data.

The Report contains Artprice’s now-famous Top-500 artists ranking, the market’s top 100 results, numerous detaild analyses – per country, per marketplace, per creative period and per artistic medium – in 21 chapters. Free download at Artprice.com

http://zh.artprice.com/artprice-reports/zh-the-art-market-in-2016

China returned to world leader position with $4.8 billion in turnover and 91,400 lots sold

The USA was second with $3.5 billion and 72,500 lots sold

The United Kingdom came third with 17% of the global auction turnover

Global auction turnover totalled $12.45 billion in 2016 with 675,500 lots sold

The lots sold in the West increased +11% (USA +24%, UK +27%)

96% of the lots sold fetched under $50,000 worldwide

New York ($3.2 billion), Beijing ($2.3 billion), London ($2.1 billion) and Hong Kong ($1.15 billion)

The year’s best result was $81.5 million for French artist Claude Monet’s La Meule (1891)

The world’s top-selling artist in 2016 was Chinese artist Zhang Daqian ($355 million)

Total artworks offered for auction worldwide increased +8%

The market’s growth drivers are the ease of access to Art Market information, electronic sales,  market financialisation, a growing population of ever-younger art consumers (from 500,000 in the 1950’s to 70 million in 2016) on all continents.

There is also the growth of the museum industry (700 new museums per year), a global economic reality in the 21st century. More museums opened between 2000 and 2014 than in the previous two centuries. The Art Market is now a mature and liquid market offering 10% to 15% annual returns on works purchased over $100,000.

In 2016, in the battle of titans between China and the USA, China re-emerged as the market’s leading power with a massive lead of $1.3 billion over the USA.

Similarly, over 30% of the artists in this year’s Top 500 ranking are Chinese artists (vs. 15% American).

With negative central bank rates, the Art Market shows is enjoying insolent health with its Contemporary segment posting a 1,490% increase in annual turnover in 17 years and a 36% linear progression in the average value of an artwork.

The Internet is now the only way forward for the world’s 6,300 Auction Houses (97% connected) on all continents.

The Art Market is an efficient, historical and global market whose ability to withstand economic and geopolitical crises is beyond any doubt.

1987-2017 thierry Ehrmann

About Artprice:

Artprice is listed on the Eurolist by Euronext Paris, SRD long only and Euroclear: 7478 – Bloomberg: PRC – Reuters: ARTF.

Artprice is the global leader in art price and art index databanks. It has over 30 million indices and auction results covering more than 647,000 artists. Artprice Images(R) gives unlimited access to the largest Art Market resource in the world: a library of 126 million images or prints of artworks from the year 1700 to the present day, along with comments by Artprice’s art historians.

Artprice permanently enriches its databanks with information from 6,300 auctioneers and it publishes a constant flow of art market trends for the world’s principal news agencies and approximately 7,200 international press publications. For its 4,500,000 members, Artprice gives access to the world’s leading Standardised Marketplace for buying and selling art.

Discover the Alchemy and the universe of Artprice http://web.artprice.com/video, which headquarters are the famous Museum of Contemporary Art, the Abode of Chaos http://goo.gl/zJssd

https://vimeo.com/124643720

https://www.facebook.com/la.demeure.du.chaos.theabodeofchaos999

http://twitter.com/artmarketdotcom

http://twitter.com/artpricedotcom

https://www.facebook.com/artpricedotcom

https://plus.google.com/+Artpricedotcom/posts

Contact : Josette Mey : e-mail : ir@artprice.com

Photo: http://photos.prnewswire.com/prnh/20160228/338238LOGO

Source: Artprice.com

آرٹ پرائس کی عالمی آرٹ مارکیٹ سالانہ رپورٹ برائے 2015ء :”قیمت میں مستقل اضافے کے ساتھ آرٹ مارکیٹ مالیاتی مارکیٹوں کے لیے حقیقی متبادل کی نمائندگی کرتا ہے”

پیرس، 29 فروری 2016ء/پی آرنیوزوائر– ہماری 14 ویں عالمی آرٹ مارکیٹ سالانہ رپورٹ ایک مرتبہ پھر آرٹ پرائس (آرٹ مارکیٹ معلومات میں عالمی رہنما، جسے تھیری ارمان نے قائم کیا اور ہدایات دیں) اور آرٹ مارکیٹ مانیٹر برائےآرٹرون (اس کا طاقتور چینی ادارہ جاتی شراکت دار، جسے وان جی ہدایات دیتے ہیں) کے درمیان اتحاد کا ثمر ہے۔ ہماری تازہ ترین رپورٹ آج کی مغربی اور مشرقی دونوں نقطہ ہائے نظر سے آج کی آرٹ مارکیٹ کی حقیقتوں کی قابل فہم اور بصیرت شعار قدر دانی پیش کرتی ہے۔

Artprice Logo.

(لوگو: http://photos.prnewswire.com/prnh/20160228/338238LOGO)
(تصویر: http://photos.prnewswire.com/prnh/20160228/338239)

اپنے وسائل کو مجتمع کرکےدونوں ادارے ایک معقول، کارآمد اور سب سے بڑھ کر آرٹ مارکیٹ کی صحت و رحجانات کا حقیقی اندازہ پیش کرتے ہیں۔ مارکیٹ کے اہم کرداروں کے درمیان مقابلے کی شدید سطح ان کئی پہلوؤں میں سے محض ایک ہے جس پر یہ رپورٹ روشنی ڈالتی ہے۔

رپورٹ میں آرٹ پرائس کی اب معروف ہو جانے والی سالانہ نیلامی آمدنی کے لحاظ سے سرفہرست 500 مصوروں کی درجہ بندی، مارکیٹ کے سرفہرست 100 نیلامی نتائج، مارکیٹ کے اشاریوں کے انتخاب، اور ساتھ ساتھ فی ملک، فی مارکیٹ مرکز، فی تخلیقی عرصہ اور فی جمالیاتی وسیلہ متعدد تفصیلی تجزیے شامل ہیں۔ اس کے 21 ابواب آج کی عالمی آرٹ مارکیٹ کا سخت اور غیر معمولی تجزیہ فراہم کرتے ہیں۔ رپورٹ پی ڈی ایف فارمیٹ میں یہاں سے مفت ڈاؤنلوڈ کی جا سکتی ہے:

http://imgpublic.artprice.com/pdf/rama2016_zh.pdf
http://imgpublic.artprice.com/pdf/rama2016_en.pdf

سرمایہ کاری منطق، منفعت کی امید سے خریداری، جمع کرنے کا جذبہ اور دنیا کے سب سے زیادہ مطلوب نمونوں کے لیے نئی عجائب گھر صنعت کی بے انتہا طلب سے ایندھن پاتی ہوئی نئی عالمی ثانوی آرٹ مارکیٹ نے 2015ء میں غیر موزوں اقتصادی و مالی حالات کے باوجود نمایاں استحکام ظاہر کیا۔ سال کے لیے کل آمدنی 16.1 بلین ڈآلرز رہی، جس میں مغرب نے اتنا ہی تخلیق کیا جتنا 2014ء میں تھا یعنی 11.2 بلین ڈالرز۔

Founder and CEO of Artprice.

قابل بھروسہ آرٹ مارکیٹ معلومات کے سوا آج کی آرٹ مارکیٹ کو تحریک دینے والی قوتیں آن لائن آرٹ فروخت کا تیزی سے نفوذپانا (کیونکہ آرٹ مارکیٹ کے 95 فیصد کردار منسلک ہیں)، قابل بھروسہ اور دلچسپ اثاثہ جات کی حیثیت سے آرٹ کا ابھرنا، آرٹ استعمال کرنے والی آبادی میں بڑے پیمانے پر اضافہ (1945ء میں محض نصف ملین سے 2015ء میں لگ بھگ 70 ملین)، زیادہ نوجوان نسل کی جانب سے مارکیٹ سنبھالنا اور ایشیا، بحر الکاہل کے گرد واقع علاقوں، بھارت، جنوبی افریقہ، مشرق وسطیٰ اور جنوبی امریکا میں توسیع شامل ہیں۔

اسے دنیا بھر میں عجائب گھروں کی تعداد میں اضافے سے بھی تحریک ملی (سالانہ 700 نئے عجائب گھر) جس کے ساتھ عالمی عجائب گھر صنعت 21 ویں صدی میں ایک اہم اقتصادی حقیقت بنی اور صرف 2000ء سے 2014ء کے درمیان پوری 19 ویں اور 20 ویں صدی سے زیادہ عجائب گھر کھلے۔ بلاشبہ عجائب گھر کے معیار کے فن پاروں کی طلب عالمی آرٹ مارکیٹ کی اعلیٰ سطح پر طلب کے بنیادی محرکات میں سے ایک ہے۔ پختہ اور رقیق دونوں آرٹ مارکیٹ اب 100,000ڈالرز سے زیادہ کی قدر رکھنے والے 10 اور 15 فیصد فی سال کے منافع پیش کرتی ہیں۔

تو یہ آج کی آرٹ مارکیٹ کی میکرو اور مائیکرو-اکنامک بنیاد ہے: ایک مارکیٹ جو گزشتہ 16 سالوں میں اقتصادی و مالیاتی عدم استحکام میں محفوظ پناہ گاہ بنی، واضح اور بارہاادائیگیوں کے ساتھ۔

منفی شرح سود اور سکڑتی ہوئے بازار ہائے حصص کے پس منظر میں آرٹ مارکیٹ اپنے ہم عصر شعبے کے ساتھ واضح طور پر صحت مند دکھائی دیتی ہے اور گزشتہ 16 سالوں میں 1,200 فیصد ترقی اور ایک آرٹ ورک کی اوسط قدر میں +43 فیصد براہ راست ترقی ظاہر کی ہے۔

آرٹ پرائس کے بارے میں:

آرٹ پرائسیورونیکسٹ پیرس کی جانب سے یورولسٹ میں مندرج ہے، ایس آر ڈی لانگ آنلی اور یوروکلیئر: 7478 –بلوم برگ: پی آر سی – رائٹرز: اے آر ٹی ایف۔

آرٹ پرائسفن پاروں کی قیمت اور ان کے اشاریہ ڈیٹا بینکس میں عالمی رہنما ہے۔ یہ 30 ملین سے زیادہ اشاریے اور نیلامی نتائج رکھتا ہے جو 615,000مصوروں کا احاطہ کررہا ہے۔ آرٹ پرائس امیجز (ر) دنیا کے سب سے بڑے آرٹ مارکیٹ ذخیرے تک لامحدود رسائی دیتا ہے: سال 1700 سے لے کر آج تک کے فن پاروں کی 118 ملین تصاویر اور پرنٹس کا ذخیرہ، جس میں آرٹ پرائس کے فنی مورخین کے تبصرے بھی شامل ہیں۔

آرٹ پرائس4,500 نیلام کنندگان کی جانب سے معلومات کے ذریعے اپنے ڈیٹابینکس کو مالا مال کرتا رہتا ہے اور دنیا کے اہم خبری اداروں اور لگ بھگ 7,200 بین الاقوامی پریس اشاعتوں کے لیے آرٹ مارکیٹ رحجانات کا مستقل بہاؤ شائع کرتا ہے۔ اپنے 4,500,000 اراکین کے لیے آرٹ کی خریداری و فروخت کے لیے آرٹ پرائس دنیا کی معروف معیار بند مارکیٹ تک رسائی دیتا ہے۔

آرٹ پرائس کی کیمیا اور کائنات کو دریافت کریںhttp://web.artprice.com/video، جس کے صدر دفاتر معروف میوزیم آف کونٹیمپرری آرٹ، دی ایڈوبی آف کیوس میں ہیں http://goo.gl/zJssdhttps://vimeo.com/124643720

https://www.facebook.com/la.demeure.du.chaos.theabodeofchaos999
http://twitter.com/artpricedotcom
ttps://www.facebook.com/artpricedotcom
https://plus.google.com/+Artpricedotcom/posts

رابطہ: ہوزیتے مے، ir@artprice.com

ذریعہ: آرٹ پرائس ڈاٹ کام

Artprice’s Global Art Market Annual Report for 2015: “With Constant Price Growth, the Art Market Represents a Veritable Alternative to Financial Markets”

PARIS, February 29, 2016/PRNewswire — Our 14th Global Art Market Annual Report is once again the fruit of an alliance between Artprice (world leader in Art Market information, founded and directed by Thierry Ehrmann) and Art Market Monitor of Artron (its powerful Chinese institutional partner, directed by Wan Jie). Our latest Report allows a lucid and insightful appreciation of the realities of today’s art market from both a Western and an Eastern viewpoint.

Artprice Logo.

(Logo: http://photos.prnewswire.com/prnh/20160228/338238LOGO )
(Photo: http://photos.prnewswire.com/prnh/20160228/338239 )

By pooling their resources, the two entities produce a pertinent, useful and, above all, genuinely global appraisal of the art market’s health and trends. The intense level of competition between the market’s major players is just one of the many perspectives that this report brings to light.

The Report contains Artprice’s now-famous Top-500 ranking of artists by annual auction turnover, the market’s top 100 auction results, a selection of market indices, as well as numerous detailed analyses per country, per market-hub, per creative period and per artistic medium. Its 21 chapters provide an uncompromising and unprecedented analysis of today’s global Art Market. The Report can be downloaded in PDF format free of charge at:

http://imgpublic.artprice.com/pdf/rama2016_zh.pdf

Fuelled by a dynamic cocktail of investment logic, speculation, collection-passion and the new museum industry’s insatiable demand for the world’s most sought-after signatures, the global secondary Art Market displayed remarkable stability in 2015 despite unfavourable economic and financial conditions. Total turnover for the year amounted to $16.1 billion, with the West generating the same total as 2014, i.e. $11.2 billion.

Founder and CEO of Artprice : Thierry Ehrmann.

Apart from access to reliable art market information, the driving forces in today’s art market are the rapid proliferation of online art sales (with 95% of the Art Market’s players connected),  the emergence of art as a reliable and interesting asset class, the massive growth of the art-consuming population (from roughly half a million in 1945 to around 70 million in 2015), the accession to the market of a much younger generation and an expansion of the market to Asia, the Pacific Rim, India, South Africa, the Middle East and South America.

It is also being driven by a museum growth phenomenon (700 new museums per year) with the global museum industry becoming a significant economic reality in the 21st century and more museums opening between 2000 and 2014 than during the entire 19th and 20th centuries. Indeed, demand for museum-quality artworks is clearly one of the primary value drivers at the high end of the global art market. Both mature and liquid, the art market now offers yields of 10% to 15% per year for works valued at over $100,000.

So this is the macro and micro-economic basis of today’s Art Market: a market that has emerged for the last 16 years as a safe haven against economic and financial instability, with substantial and recurring returns.

Against a backdrop of negative interest rates and contracting stock markets, the Art Market looks remarkably healthy with its Contemporary segment alone posting a 1,200% progression of annual turnover over the past 16 years and a +43% linear progression of the average value of an artwork.

About Artprice:

Artprice is listed on the Eurolist by Euronext Paris, SRD long only and Euroclear: 7478 – Bloomberg: PRC – Reuters: ARTF.

Artprice is the global leader in art price and art index databanks. It has over 30 million indices and auction results covering more than 615,000 artists. Artprice Images(R) gives unlimited access to the largest Art Market resource in the world: a library of 118 million images or prints of artworks from the year 1700 to the present day, along with comments by Artprice’s art historians.

Artprice permanently enriches its databanks with information from 4,500 auctioneers and it publishes a constant flow of art market trends for the world’s principal news agencies and approximately 7,200 international press publications. For its 4,500,000 members, Artprice gives access to the world’s leading Standardised Marketplace for buying and selling art.

Discover the Alchemy and the universe of Artprice http://web.artprice.com/video, which headquarters are the famous Museum of Contemporary Art, the Abode of Chaos http://goo.gl/zJssd https://vimeo.com/124643720

https://www.facebook.com/la.demeure.du.chaos.theabodeofchaos999

	    
     
    http://twitter.com/artpricedotcom   
    https://www.facebook.com/artpricedotcom 
    https://plus.google.com/+Artpricedotcom/posts 

Contact: Josette Mey, ir@artprice.com

Photo: http://photos.prnewswire.com/prnh/20160228/338238LOGO http://photos.prnewswire.com/prnh/20160228/338239

Source: Artprice.com

 

آرٹ مارکیٹ معیار بندی کے ہدف کی جانب آرٹ پرائس کی پیش قدمی

پیرس، 6 جولائی 2012ء/پی آرنیوزوائر–

جیسا کہ 4 جون 2012ء کو جاری کردہ اعلامیہ میں اعلان کیا گیا تھا کہ آرٹ پرائس نے اپنے ڈیٹابیس ڈھانچے کے بڑے حصے کو انٹرنیٹ فری ویئر پر منتقلی اور آرٹ مارکیٹ معیار بندی (استعمال کی کچھ پابندیوں کے ساتھ مالک کے اجازت ناموں کی مفت تقسیم) شروع کر چکا ہے۔ آرٹ پرائس کے ڈیٹا بیسز کو تشکیل دینے والے توتمام صنعتی عمل پیٹنٹ سے محفوظ شدہ ہیں، خصوصاً اے پی پی (ایجنسی دے پروٹیکشن دے پروگرامز –سافٹویئرپروٹیکشن ایجنسی) کی جانب سے۔

آرٹ مارکیٹ کے کھلاڑیوں کی ضروریات ایسی ہیں کہ آرٹ پرائس کا عام نیلامیوں کے لیے پیشکردہ 497,677 فنکاروں کا باقاعدہ ڈیٹابیس 205,000 سے زائد مرتبہ مکمل ڈاؤنلوڈ کیا گیا ہے۔ تھیری ایرمان، بانی اور سی ای او آرٹ پرائس، کے مطابق: یہ زبردست اعداد و شمار، جو موسم گرما کے ایک صرف ایک مہینے (جون2012ء) میں حاصل کیے گئے، آرٹ پرائس کے نظریات اور طلب کی توثیق کرتے ہیں جن کے مطابق آرٹ مارکیٹ کی معیار بندی آرٹ مارکیٹ کی عدم تشکیل کی شاہ کلید  ہے، جس میں نجی ٹھیکوں یا نیلامیوں کے ذریعے فن پاروں کی خرید و فروخت کے لیے اسٹینڈرڈائزڈ مارکیٹ پلیس (ر)کا طریقہ شامل ہے۔

یکم جون 2012ء سے خصوصاً تعلیمی اداروں، عجائب گھروں، اداروں، کتب خانوں، قانونی و کسٹمز سروسز، کاپی رائٹرز (جیسا کہ ADAGP)، انشوررز، انسائیکلوپیڈک ڈیٹابیسز (جیسا کہ وکی پیڈیا)، انٹرنیٹ ڈائریکٹریز اور، بلاشبہ، نیلام گھروں، گیلریوں اور تشخیص و تخمینہ کاروں کی انجمنوں، کو اب آرٹ پرائس کے آرٹسٹ-انڈیکس ڈاٹ کام (Artists-index.com) تک مفت رسائی ہوگی۔ یہ معیاری ڈیٹابیس، Artist-id.com، آرٹ  مارکیٹ، مورخین اور محققین کی نظروں میں اب تک دنیا کا جامع ترین آرٹسٹس انڈیکس تسلیم کیا گیا ہے۔انگریزی کے ساتھ ساتھ یہ 5 دیگر زبانوں میں بھی ہے: فرانسیسی، جرمنی، اطالوی، ہسپانوی اور چینی۔ ڈیٹابیس تک مفت رسائی کے لیے ملاحظہ کیجیے: http://web.artprice.com/artists/directory/A

مذکورہ بالا تمام صارفین اور مارکیٹ کھلاڑی جلد ہی اوپن اے پی آئیز پر آرٹ پرائس کی بی2بی ڈیولپمنٹ کا لطف اٹھانے کے قابل ہوں گے جو ویب کے اصل ڈھانچے کو استعمال کرتے ہوئے فکسڈ اور موبائل سسٹم کے لیے ایک ایپلی کیشن تیار کرنے کا جدید طریقہ ریسٹ (Representational State Transfer) ہے۔ اس جہت کا ایک آرٹسٹس ڈیٹابیس، جسے روزانہ اپ ڈیٹ کیا جاتا ہے، آرٹ پرائس کی جانب سے 1997ء سے 2012ء تک دنیا بھر میں درجنوں حصول اور اس کے مورخین، لکھاریوں اور آئی ٹی ماہرین کی لاکھوں گھنٹوں کی محنت کا ثمر ہے (آرٹ پرائس کے حوالہ جاتی دستاویز کی تفصیلات اور پس منظر دیکھئے، جسے اے ایم ایف کی جانب سے سند بخشی گئی اور ان کی ویب سائٹ پر دستیاب ہے)۔

آرٹ پرائس کے بانی اور سی ای او تھیری ایرمان کے مطابق آرٹ کی دنیا کے لیے مکمل معلومات کو مفت دستیاب کرنے کی حکمت عملی اور کس شاندار اولین نتائج، جنہیں صرف ایک مہینے میں حاصل کیا گیا، آرٹ پرائس کو اپنی مارکیٹ معیار بندی کو مستحکم کرنے کی سہولت دے گی تاکہ وہ اپنی یک-قیمت اور نیلامی-بروکریج سرگرمیوں کو بہتر بنانے میں تیزی لا سکے اور بے ضابطہ آرٹ نیلامی ماحول میں معیاری بنیادی ڈھانچہ بن کر ناگزیر طور پر عالمی کھلاڑی بننے کی حیثیت سے اپنی پوزیشن کو یقینی بنائے ، 2012ء کے مطابق، آن لائن نیلامی بروکریج آپریشنز کا عمل، (فرانسیسی قانون نمبر 2011-850 از 20 جولائی 2011ء کے آرٹیکل5 کے مطابق)۔

لاکھوں کروڑوں ملکیتی ڈیٹا انٹریز کے ساتھ یہ صنعتی عمل، جو آرٹ مارکیٹ کی معیار بندی کرتے ہیں (آرٹسٹ کی شناخت، کام کی شناخت، کیٹلاگ درجہ بندی شناخت، کتابیاتی شناخت وغیرہ)، جو اس وقت آرٹ مارکیٹ میں پیش کی جا رہی ہیں، خصوصاً 2003ء میں گوگل کے ساتھ کیے گئے معاہدے کے تحت (آرٹ پرائس کے آمدنی یا کمائی برائے 2012ء پر بغیر کسی اثر کے)، لیکن ریسٹ ڈھانچے میں تخلیق کردہ کھلی اے پی آئیز کے ذریعے بھی، تاکہ صارفی ڈیٹابیس کی بہت مستحکم رفتار کو تشکیل دیا جا سکے۔ مزید برآں، ایک موبائل ایپلی کیشن اس وقت زیر تکمیل ہے، آئی پیڈ/آئی فون اور گوگل اینڈرائیڈ دونوں کے لیے۔

اپنی یک-قیمت اور نیلامی بروکریج معیاری آرٹ مارکیٹ سے تخلیق کردہ معیار بندی کے ان خطوں کے ذریعے، آرٹ پرائس اب معلومات کا بڑا حجم فری ویئر موڈ میں منتقل کرنے کے قابل ہے جس کا مقصد اپنے صارفین کی ڈیٹابیس کو (رویہ جاتی لاگس – خریداریاں، فروخت، تلاش، آرٹ پورٹ فولیو وغیرہ کے ساتھ) سال کے اختتام سے قبل 1.4 ملین سے 2 ملین تک بڑھانا ہے ، جس کے تحت تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق مثبت پیشرفت ہو رہی ہے۔

ذریعہ: http://www.artprice.com (c)1987-2012  تھیری ایرمان

آرٹ پرائس 27 ملین سے زائد فہرستوں اور فن کاروں کا احاطہ کرنے والے 4 لاکھ 97 ہزار نیلامی نتائج کا ڈیٹا بینک رکھنے والا عالمی رہنما ادارہ ہے۔ آرٹ پرائس امیجز (ر) دنیا بھر میں آرٹ مارکیٹ کی معلومات کے سب سے بڑے ڈیٹا بیس پر لامحدود رسائی فراہم کرتا ہے، جو 1700ء سے آج تک کی 108 ملین تصاویر اور فن پاروں کے وسیع ذخیرے کا حامل ہے جس کے ساتھ آرٹ پرائس کے آرٹ مؤرخین کے تبصرے بھی شامل ہیں۔ آرٹ پرائس 4500 بین الاقوامی نیلام گھروں سے اپنے ڈیٹا بیس کی معلومات میں مستقل اضافہ کرتا رہتا ہے اور دنیا بھر  کے 6300 ابلاغی ابواب کو آرٹ مارکیٹ کے رحجانات پر روزانہ معلومات فراہم کرتا ہے۔ آرٹ پرائس اپنے 1.4 ملین اراکین (ممبر لاگ اِن) کی خاطر فن پاروں کی خریداری و فروخت کے لیے آج کی دنیا کے معروف اسٹینڈرڈائزڈ مارکیٹ پلیس (ر) میں معیاری اشتہار پیش کرتا ہے (فرانسیسی قانون کے تحت

 alinéas 2 et 3 de l’article L 321.3 du code du commerce)۔

آرٹ پرائس یورونیکسٹ پیرس (SRD long only) کی جانب سے یورولسٹ بی میں مندرج ہے: یوروکلیئر: 7478 – بلوم برگ: پی آر سی – رائٹرز: اے آر ٹی ایف

آرٹ پرائس اعلامیے:

http://serveur.serveur.com/press_release/pressreleaseen.htm

الکیمی اور آرٹ پرائس کی دنیا کو دریافت کریں http://web.artprice.com/video، جس کا صدر دفتر ہم عصر آرٹ کا معروف عجائب گھر، دی ایڈوبے آف کیوس ہے۔

آرٹ پرائس کے ساتھ مارکیٹ کی تمام خبروں کو ٹویٹر پر فالو کریں:

رابطہ: ہوزیت مے – ٹیلی فون: +33(0)478-220-000، ای میل: ir@artprice.com

ذریعہ: آرٹ پرائس ڈاٹ کام

Artprice Surpasses Itself in its Goal to Standardise the Art Market

PARIS, July 6, 2012/PRNewswire/Asianet Pakistan/ –

As already announced in our press release on 4 June 2012, Artprice has now started the progressive transfer to internet freeware of a large part of its database structure and of its Art market standardisation (owner licenses distributed freely with certain usage restrictions). All of the industrial processes forming Artprice’s databanks are patent protected, notably by the A.P.P. (Agence de Protection des Programmes – Software Protection Agency).

The art market players’ needs is such that Artprice’s normalized database of 497,677 artists listed at public auctions has been fully downloaded over a total of 205,000 times. According to thierry Ehrmann, Founder and CEO of Artprice : -this spectacular figure, achieved in one summer month (June 2012)-, validates Artprice’s Creed and Postulate according to which the art market’s standardization is the master key to dematerializing the art market, which includes of course the Standardised Marketplace® for buying and selling works of art by private contract or at auctions.

For the record, since 1 June 2012, the Artworld, particularly Institutions, Universities, Museums, Foundations, Libraries, Legal & Customs Services, Copywriters (like ADAGP), Insurers, Encyclopaedic databases (like Wikipedia), Internet Directories and, of course, Auction Houses, Galleries, and Associations of Valuers, now have free access to Artprice’s Artists-index.com. This standardised database, Artist-id.com, is considered by far the most exhaustive artists-index in the world by the art market, historians and researchers alike. It is available in 5 languages in addition to English (French, German, Italian, Spanish and Chinese). To get your free access to this database, visit: http://web.artprice.com/artists/directory/A

All of the above-mentioned key users and market participants will thus soon also be able to enjoy Artprice’s B2B development on open APIs using REST (Representational State Transfer) architecture, an innovative way of constructing an application for fixed and mobile systems using the Web’s original architecture. An Artists database of this dimension, added to daily, is the fruit of dozens of acquisitions worldwide by Artprice and a nearly a million hours of work by its Historians, Writers and IT Developers from 1997 to 2012 (see details and background in Artprice’s Reference Document, certified by and available on the AMF’s website).

According to thierry Ehrmann, this strategy of making integral information freely available to the Artworld and the spectacular first results, achieved in less than a month, will enable Artprice to strengthen its art market standardisation so that it can accelerate the development of its fixed-price and auction-brokerage activities and ensure its position as an unavoidable global player in a deregulated art auction environment by becoming a standardised infrastructure allowing, as of 2012, the processing of online auction brokerage operations (as described in Article 5 of French Law no. 2011-850 of 20 July 2011).

These industrial processes, which standardise the Art Market (artist ID, artwork ID, catalogue ID catalogue raisonné, References ID, etc.) with tens of millions of proprietary data entries, are currently being deployed on the art market, notably in the framework of the partnership signed with Google in 2003 (without any impact on Artprice’s revenue or earnings for 2012), but also via the development of the open APIs created in REST architecture, in order to generate a very strong acceleration of the client database. In addition, a mobile application is currently being developed, both for Ipad / Iphone and for Google’s Android.

Via these new vectors of standardisation, originating from its fixed-price and auction brokerage Standardised Art Marketplace, Artprice is now able to transfer vast amounts of information to freeware mode with the goal of raising its client database (with accompanying behavioural logs – purchases, sales, searches, art portfolios, etc.) from 1.4 million to 2 million before the end of the year, which is progressing positively given the latest figures.

Source: http://www.artprice.com ©1987-2012 thierry Ehrmann

Artprice is the global leader in databank on Artprices and indices with more than 27 million indices and auction results covering 497,000 artists. Artprice Images® offers unlimited access to the largest Art Market resource in the world, a library of 108 million images or engravings of artworks from 1700 to the present day along with comments by Artprice’s art historians. Artprice permanently enriches its databanks with information from 4,500 international auction houses and auctioneers and publishes a constant flow of art market trends for the main news agencies and 6,300 international written media. For its 1.4 million members (member log in), Artprice posts standardized adverts in what is today the world’s leading Standardised Marketplace® for buying and selling works of art by private contract or at auctions (regulated by French law alinéas 2 et 3 de l’article L 321.3 du code du commerce).

Artprice is listed on Eurolist B by Euronext Paris (SRD long only) : Euroclear: 7478 – Bloomberg: PRC – Reuters: ARTF

Artprice releases:

http://serveur.serveur.com/press_release/pressreleaseen.htm

Discover the Alchemy and the universe of Artprice http://web.artprice.com/video/, which headquarters are the famous Museum of Contemporary Art, the Abode of Chaos

Follow all of the art market’s news with Artprice on Twitter:

http://twitter.com/artpricedotcom/

Contact: Josette Mey – tel: +33(0)478-220-000, email: ir@artprice.com

Source: Artprice.com